Tags » Human Rights News

Afghanistan: No justice for thousands of civilians killed in US/NATO operations

The families of thousands of Afghan civilians killed by US/NATO forces in Afghanistan have been left without justice, Amnesty International said in a new report released today. 909 more words

Human Rights News

Chief Minister Sindh Syed Qaim Ali Shah forms committee to identify underprivileged

Friday, July 25, 2014 – Karachi—The Chief Minister (CM) Sindh Syed Qaim Ali Shah has constituted a five member committee headed by Additional Chief Secretary Development, with Provincial Secretary… 428 more words

Political News

GilgitBaltistan's governance order needs to be revisited, says Senator Raza Rabbani

ISLAMABAD: The convener of a subcommittee of the Senate functional committee on human rights, Senator Raza Rabbani, on Monday said the Gilgit-Baltistan Empowerment and Governance Order 2009 needed to be revisited. 336 more words

Political News

No PIA employee to be expelled until PPP is there: Rabbani

Peoples Unity of the PIA, a wing of Pakistan People’s Party (PPP), on Thursday staged a protest demonstration outside the Karachi Press Club against Pakistan International Airlines (PIA) privatisation plan and criticised the Pakistan Muslim League-Nawaz (PML-N) government for its bid to turn hundreds of people jobless. 232 more words

Political News

Pakistan Peoples Party appreciated the spirit of the Human Rights Commission of Pakistan

The Special Assistant to Chief Minister Sindh Waqar Mehdi who was also the Information Secretary of PPP Sindh chapter has said that history is evident that PPP always has advocated, fought and rendered great sacrifices to protect the Human Rights. 822 more words

Political News

پی پی انسانی حقوق سے متعلق انسانی حقوق کمیشن کے جذبے کی قدر کرتی ہے   معاون خصوصی وزیراعلیٰ سندھ  وقارمہدی

 وزیراعلیٰ سندھ کے معاون خصوصی وقار مہدی نے کہا ہے کہ تاریخ گواہ ہے کہ پاکستان پیپلزپارٹی نے ہمیشہ انسانی حقوق کے تحفظ کے لئے جدوجہد کی ہے اور جانوں کا نذرانہ پیش کیا ہے۔ پی پی کے سوا کوئی جماعت انسانی حقوق کی قدر اور اہمیت کو نہیں سمجھ سکتی کیو ں کی پی پی پی انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کا شکار رہی ہے اور ملک میں آمریتی دور میں پی پی پی قیادت اور ورکروں کو ان کے بنیادی حقوق سے محروم کرکے ان پر طرح طرح کے ظلم ڈھائے گئے۔ انہوں نے کہا کہ پی پی پی جب بھی اقتدار میں آئی ہے تو اس نے ہمیشہ انسانی حقوق کا تحفظ کیا ہے اور جب اقتدار میں نہیں ہوتی تو انسانی حقوق کی سربلندی کے لئے جدوجہد کرتی رہی ہے۔معاون خصوصی وقار مہدی نے کہا کہ انسانی حقوق سے متعلق پی پی انسانی حقوق کمیشن کے جذبے کی قدر کرتی ہے اور اس لئے وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ انسانی حقوق کمیشن آف پاکستان کے وفد سے تفصیلی ملاقات میں انہیں انسانی حقوق کے تحفظ کو مؤثر طریقے سے یقینی بنانے کے لئے اپنی سفارشات بھی پیش کرنے کا کہا تھا ۔ وزیراعلیٰ سندھ کے معاون خصوصی وقارمہدی نے کہا کہ کراچی میں جاری کامیاب ٹارگیٹیڈ آپریشن تمام سیاسی پارٹیوں کے مطالبے پر شروع کیا گیا تاکہ کراچی کو دوبارہ امن کا گہوارہ بنایا جائے ، دہشت گردوں ، بھتہ خوروں ، ٹارگیٹ کلرز اور اغوا کاروں سے عوام کے جان و املاک کو تحفظ فراہم کیا جائے۔ انہو ں نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کے حالیہ کراچی کے دورے کے موقع پر تمام سیاسی جماعتوں ، بزنس کمیونٹی اور دیگر اسٹیک ہولڈرز نے نہ صرف ٹارگیٹڈ آپریشن کی حمایت کی بلکہ اسے مزید تیز کرنے کی سفارش کی۔ انہوں نے کہا کہ جاری ٹارگیٹیڈ آپریشن بلا کسی سیاسی تفریق کے جاری ہے اور اتنے بڑے گنجان آباد شہر میں اتنے بڑے پیمانے پر ٹارگیٹیڈ آپریشن سے لوگوں کی تکالیف کو خارج المکان نہیں کیا جاسکتا۔ انہوں نے کہا کہ عسکریت پسندی کی لعنت ، ہیروئین اور ڈرگ مافیا، انتہاپسندی لسانی اور مذہبی منافرت جیسے درپیش مسائل کے بیج ڈیکٹیٹر ضیاء کے دور میں بوئے گئے ، پی پی پی نے ان چیلنجز کا شہید ذوالفقار علی بھٹو کی قیادت میں ڈٹ کر مقابلہ کیا ۔ جنہوں نے اپنی زندگی تک اس مقصد کے لئے قربان کردی ، وقار مہدی نے کہا کہ محترمہ شہید بینظیر بھٹو نے بھی اپنے شہید بابا کے مشن کو جاری رکھا جن کی منتخب عوامی حکومت کو اپنی آئینی مدت مکمل کرنے سے دو مرتبہ محروم کر دیا گیا اور بالآخر انہیں شہید کردیا گیا۔ آمریتی ادوار کے دوران پی پی کے رہنماؤں اور ہزاروں کارکنوں پر تاریخ کا بدترین ٹارچر کیا گیا اور انہیں کئی کئی ماہ تک گرم سحراؤں میں گرم ریت پر لیٹایا جاتا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ پی پی پی قیادت اور کارکنوں پر جو ظلم کے پہاڑ گرائے گئے ، انسانی حقوق کی جو پامالی کی گئی اور کوڑے برسائے گئے ، پارٹی کی قیادت اور ورکر جن محرومیوں اور ٹارچر کے مراحل سے گزرے ہیں پی پی پی سے بہتر انسانی حقوق کی اہمیت اور قدر کوئی دوسرا نہیں جانتا۔ وفاق کے متعلق ایک تا ثر حوالے سے وقار مہدی نے کہا کہ پی پی صوبہ سندھ میں اقتدار میں وفاقی حکومت کے کسی بھی فعل اور عمل کی ذمہ دار ی اس پر نہیں عائد ہوگی۔گمشدہ افراد اور ماروائے عدالت قتل کے معاملے پر وقار مہدی نے کہا کہ اس حقیقت سے سب بخوبی واقف ہیں کہ شہر میں ا یک ددسرے مخالف انتہا پسند گروہ اپنے مخالفوں کو اغوا کرکے ٹارچر کرتے ہیں اور ان کو قتل کر کے ان کی لاشیں پھینکی جاتی ہیں اس صورتحال کا ذمہ دار قانون نافذ کرنے والے اداروں کاٹھرانا قطعی طور پر غلط ہے کیوں کے قانون نافذ کرنے والے اہلکار اپنی جان ہتھیلی پر رکھ کر عوام کے جان و مال کو تحفظ فراہم کر رہے ہیں انہوں نے سوال کیا کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے اپنے فرائض سے برخلاف کوئی کام کیسے کر سکتے ہیں برعکس عمل کیسے کر سکتے ہیں۔ وقار مہدی نے کہا کہ پولیس کی نفری میں اضافے کے متعلق ایک تاثر کے حوالے سے مالی سال 2013-14کے دوران 10ہزار پولیس اہلکار بھرتی کئے گئے ہیں جبکہ رواں مالی سال میں مزید 10ہزار پولیس اہلکار بھرتی کئے جائیں گے جن کو دور جدید کی ہم آہنگ تربیت فراہم کی جائیگی انہوں نے کہا کہ یہ بات وزیراعلیٰ سندھ برملا ہر وقت کہتے رہے ہیں اور حال ہی میں انسانی حقوق کی کمیشن کو بھی بتایا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہر کسی کو معلوم ہے کہ حکومت سندھ پولیس کو مستحکم کرنے کے بلیٹ پروف جیکٹس ، ہیلمیٹ اور بکتر بند گاڑیوں و دیگر آلات کی خریداری کے لئے 6بلین روپے فراہم کئے ہیں اسکے علاوہ پولیس اہلکاروں کو متعلقہ تھانوں کے حدود میں رہائشی سہولیات فراہم کرنے کے لئے بھی ایک منصوبہ زیر غور ہے ۔ وقار مہدی نے کہا کہ رینجرز کو مستقل طور پر تعینات نہیں کیا گیا مگر وہ دشہر میں جرائم کے خاتمے کے لئے سندھ پولیس کی مدد کر رہی ہے۔ مسئلے کے حل کے لئے بلدیاتی انتخابات سے متعلق انہوں نے کہا کہ پی پی بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کے لئے تیار ہے جس کا اظہار متعدد بار عدالت کے سامنے بھی کیا گیا ہے تا ہم بلدیاتی انتخابات کے انعقاد میں قانونی پیچیدگیاں عدالت میں زیر التواء ہیں۔ وقار مہدی نے کہا کہ حکومت سندھ نے شہریوں ، تاجروں بزنس کمیونٹی کے مفاد میں شہر میں ٹارگیٹید آپریشن کا آغاز کیا ہے تاکہ سماجی ، ثقافتی و اقتصادی سرگرمیوں کو فروغ دیا جائے اور دنیا میں شہر قائد کا کھویا ہوا امیج بحال کیا جائے اس لئے وقت کی اہم ضرورت ہے کہ تمام لوگ اور ادارے اس آپریشن کی مالکی کریں اور قانون نافذ کرنے والے اداروں سے تعاون کریں ۔ انہوں نے کہا کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کی حوصلہ شکنی اور بلاجواز تنقید کے بجائے ہمیں انکے حوصلے بلند کرنے کے لئے تعمیری تجاویز دینی چاہیں اور ہر حوالے سے ان کے ساتھ تعاون کرنا چاہیے۔ 7 more words

Political News

Powers to Islamabad bureaucracy to grant mining licenses in G-B opposed

Powers to Islamabad bureaucracy to grant mining licenses in G-B opposed

Assault on the fundamental rights of local people and will not be allowed

Islamabad July 15, 2014: The new Mining and Minerals Concession policy for Gilgit-Baltistan giving powers of issuing mining licenses to the bureaucracy in Islamabad is a brazen attack on local autonomy, a grave assault on the fundamental rights of the people and deprives them of the scant self rule they have under the Constitution. 394 more words

Latest News