Tags » Karachi

The Colonial Mindset.

Bureaucrats can’t be businessmen. Government departments can’t be run like a business corporation. Private sector management is superior. But how do these opinions play out in a real world situation? 994 more words

ننھے شہیدوں کو خراج عقیدت اور ایم کیو ایم کی یکجہتی ریلی‎

میرا یہ بلاگ پشاور کے اسکول میں علم حاصل کرتے ہوے شہید ہونے والے ننھے طلباء کے نام ہے جو سانحہ پشاور میں شہید ہوۓ . پوری دنیا اور خصوصی طور پر  پاکستان میں سیاسی و مذہبی جماعتیں این جی اوز  میڈیا ،اینکرزپرسنز خواہ کہ کسی بھی شعبہ سے تعلق رکھتا ہو کوئی شخص ہر فرد اس المناک سانحہ پر اپنے اپنے طریقے ،اور جس کو جس طرح سے بھی  توفیق ہوئی سب پشاور سانحہ میں شہید ہونے والے معصوم طلباء کو اپنے طور سے  خراج عقیدت پیش کرر ہے  ہیں  کسی نے شمعیں روشن کیں کسی نے قرآن خوانی کروائی  اور پاکستان کی سیاسی جماعتوں میں واحد ایم کیو ایم ہے جس نے سانحہ پشاور کے  شہداء  کو خراج عقیدت پیش کرنے کے  ساتھ  ساتھ ملک و قوم کو یکجا کرنے اور افواج پاکستان کے ساتھ یکجہتی کے لیے 19 دسمبر  بروز جمعہ کو کراچی میں  ریلی کا انعقاد کیا جس میں عوام نے بھرپور شرکت کی جس سے واضح ہے کہ عوام افواج پاکستان کے شانہ بشانہ کھڑی ہے ایم کیو ایم اس سے پہلے بھی  ہر طرح سے دہشتگردی کی مذمت کرتی آئی ہے اور الطاف حسین صاحب ایم کیو ایم کا موقف واضح ہے اور اس طرح کی ریلی کی   پاکستان کو اشد ضرورت ہے

.

 ایم کیو ایم کے قائد جناب الطاف حسین صاحب نے یکجہتی ریلی  سے خطاب کرتے ہوے کہا کہ
آج کی ریلی کا مقصد سانحے پشاور کے  معصوم شہداء کو خراج  عقیدت پیش کرنے اور دہشتگردوں کے خلاف جاری آپریشن  ضرب عضب میں پاک افواج سے یکجہتی کا اظہار ہے یہ ایم کیو ایم کی نہیں  پورے پاکستان کی نمایندہ ریلی ہے – الطاف حسین 

ایم کیو ایم کے قائد جناب الطاف حسین صاحب نے ریلی کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوۓ مطالبہ کیا کہ ضرب عضب آپریشن کا دئرہ پورے ملک پھیلایا جاے اور کالعدم تنظیموں اور انکے حامی جماعتوں کے خلاف بھی بھرپور کاروائی کی جاۓ.

الطاف حسین صاحب نے  اسلام آباد کی سول سوسائٹی کو لال مسجد کے باہر ڈنڈا بردار شریعت کے خلاف مظاہرہ کرنے پر خراج تحسین پیش کیا اور مطالبہ کیا کہ   لال مسجد کے مولوی عبدالعزیز کو گرفتار کیا جاۓ اور جامعہ حفصہ کو فی الفور بند کیا جاۓ .مولانا عبدالعزیز نے سانحہ پشاور کو دہشتگردوں کا ردعمل قرار دیا

طالبان کی حمایت  کرنے والے جہنمی ہیں الطاف حسین فائد ایم کیو ایم

آپریشن ضرب عضب اخری دہشتگرد تک جاری رہنا چاہیے الطاف حسین

جناب الطاف حسین صاحب نے اپنے خطاب میں افواج پاکستان  اور دیگر شہداء کا زکر کرتے ہوۓ تمام شہداء خصوصی طور پر افواج پاکستان  کے شہداء کو سلام تحسین پیش کیا اور افواج پاکستان کی صلاحیتوں کو بھی سراہا

قومی یکجہتی ریلی میں پاکستان عوامی تحریک ،پاکستان پیپلزپارٹی ،مجلس وحدت المسلمین ،مسلم لیگ نواز،ق،فنکشنل کے رہنماؤں سمیت مختلف سیاسی و مذہبی اور سماجی شخصیات نے بھی شرکت کی اور ریلی کے شرکاء سے اپنا اظہار خیال کیا

ریلی کے شرکاء مظلوموں کے ساتھی اور طالمان کے خلاف ہیں- علامہ کرار علی نقوی

الطاف حسین صاحب نے تمام لوگوں کو دہشتگردی کے خلاف متحد کرکے ثابت کردیا کہ وہ امن کے سفیر ہیں- گلفام جاوید

پشاور میں شہید ہونے والے بچے سکھ برادری کے بھی بچے ہیں – سردار کرشن

الطاف حسین نے سانحے پشاور کے غم کو جس طرح ٹیلی ویژن پر اجاگر کیا اس سے ہر آنکھ پر نم ہوگئ تھی – جمیل پراچہ

الطاف حسین صاحب نے ظالمو و جابروں کے نام لیکر بتایا کہ کون کون لوگ ہیں .- علی حسین نقوی

جنہوں نے پاکستان کو دو لخت کیا انہوں نے سانحہ پشاور کرکے پاکستان کے سینے میں خنجر گھونپ دیا ہے – نہال ہاشمی پاکستان مسلم لیگ نواز

ایم کیو ایم کی لیڈرشپ کو سلام ہے جس نے پہل کی اور سب کو دہشتگردی کے خلاف متحد کردیا – حلیم عادل شیخ   ؛پاکستان مسلم لیگ ق

ایم کیو ایم ملک کے استحکام اور افواج پاکستان سے اظہار یکجہتی میں ماضی کی طرح اس مرتبہ بھی ماضی کی طرح سبقت لے گئ – کامرن ٹیسوری مسلم لیگ فنکشنل

ہم دہشت گردوں کے سامنے پسپا ہونے کے بجاے سینہ سپر ہوکر اعلان جنگ کرنے کی سکت رکھتے ہیں – نثار کھوڑو  پاکستان پیپلزپارٹی

ایم کیو ایم کے تحت یکجہتی ریلی دشمنان پاکستان کے منہ پر طمانچہ ہے کراچی کی عوام نے یکجہتی ریلی میں شرکت کرکے ثابت کردیا کہ وہ دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ میں افواج پاکستان کے ساتھ ہیں اور افواج پاکستان کی قربانیوں کو سہراتے ہوۓ خراجِ تحسین پیش کرتے ہیں ریلی کے شرکاء کا جوش و خروش  قابل دید تھا لاکھوں خواتین  نوجوانوں  اور بزرگوں کی طالبان  داعش دہشتگردوں کی مذمت
تبت سینٹر کراچی کے اطراف کا علاقہ پاک آرمی کے حق میں نعروں سے گونج رہا تھا ایسا قومی جذبہ آج تک میں نے نہیں دیکھا اللہ ہماری قوم کو اسی طرح متحد رکھے آمین

.

الطاف حسین صاحب کی ہدایت پر ایم کیو ایم کی جانب سے پاک افواج و پشاور کے معصوم شہداء کے حق میں کراچی  کے مقام تبت سینٹر پر عالیشان یکجہتی ریلی منعقد کرنے پر  دل کی گہرائیوں سے مبارکباد  پیش کرتا ہوں اچھا ہوتا کہ دوسری جماعتیں بھی اسی  طرح کے اجتماعات منعقد کرتیں مگر افسوس صد افسوس کہ اب تک کسی نے سیاست سے بالاتر ہوکر انسانیت کے ناطے کچھ سوچا ہی نہیں عمران خان صاحب  میاں محمد نواز شریف صاحب اقتدار کی رسہ کشی بعد میں کرلیجیے گا سابق صدر آصف زرداری صاحب آپ بھی دبئی میں بیٹھ کر  سوئس اکاؤنٹ کی حفاظت بعد میں کرلیجیے گا سانحہ پشاور پر بھی  آپ نے سواۓ  گھسی پٹی  کھوکلی مذمت کے اعلاوہ  کچھ نہیں کیا اور  کراچی میں 19 دسمبر  بروز جمعہ کو منعقد ہونے والی افواج پاکستان سے یکجہتی ریلی میں عمران خان صاحب یا تحریک انصاف کا شرکت نہ کرنا انکے قول و فعل پر بہت بڑا سوالیہ نشان ہے آپ لوگ بھی صاحب اولاد ہیں اور آپ بھی انسان ہیں اللہ آپکی انسانیت کو  بیدار کرے اور آپ بھی ایم کیو ایم کی طرح ایسی کوئی ریلی  یا اجتماعات کا انعقاد کریں جیسے کراچی میں یکجہتی کا مظاہرہ کیا گیا .
میرا مقصد کسی کو تنقید کرنا نہیں اور نہ کسی کی تعریف کے پل باندھنے ہیں یوں تو سانحہ پشاور پر 2 بلاگز پہلے ہی لکھ چکا ہوں اور مزید یہ تیسرا بلاگ لکھنے کا مقصد یہ ہے کہ میں اپنے ننھے شہیدوں کو مخصوص طریقے سے خراجِ عقیدت پیش کرنا چاہتا ہوں اور میرا یہ بلاگ بھی انھی کے نام ہے کیوں کہ جب میں نے سانحے پشاور کے بعد شہید بچوں کے لواحقین کے جذبات سنے انکے آنسو دیکھے تو میرے اندر موجود انسانوں کے لیے درد رکھنے والی انسانیت اور میرے قلم نے مجھے دوبارہ اسی موضوع پر لکھنے کے لیے مجبور کردیا سمجھ نہیں آتا کہ درندگی  حیوانگی  بربریت سفاکیت .. کونسا لفظ ان جاہلوں اور جنونیوں کے لیے استعمال کیا جاے جنھوں نے پشاور میں معصوم بچوں کو خاک و خون میں نہلادیا .
سمجھ نہیں آتا کوئ درندہ صفت انسان بھی ہوسکتا ہے؟
سانحہ پشاور اسکول میں اب تک کے شہداء کی کل تعداد 150 کے قریب پہنچ گی ہے اور اب بھی 140 سے زائد زخمی ہیں اور اب تک شہداء  کی تعداد حتمی نہیں ہے طالبان کے دہشتگردوں نے پشاور کے آرمی پبلک اسکول میں اکثریت ان بچوں کو اپنی بربریت کا نشانہ بنایا جن بچوں  کے بڑے بھائ  چچا یا کوئی  بھی خاندان کا فرد دہشتگردوں  کے خلاف جاری آپریشن ضرب عضب میں حصہ لے رہے ہیں سانحہ پشاور ہماری افواج پاکستان کی سب سے بڑی قربانی ہے جس کی دنیا کی تاریخ میں کوئی مثال نہیں ملتی جس کی بھارت و دیگر ہمسایہ ممالک اور  بین الاقوامی دنیا نے   بھی معصوم بچوں کی شہادت پر بھر پور مذمت کی .
پشاور میں 16 دسمبر 2014 کو رونما ہونے والا المناک سانحہ دنیا کی تاریخِ کا دوسرا بدترین  سانحہ ہے کیوں کہ انسانی تاریخ میں ایسی بربریت و سفاکیت اس واقعے سے پہلے روس میں 2002 میں  پیش آئی کہ جب اسی طرح ایک روسی اسکول میں 186 بچوں کو درندگی سے گولیوں کا نشانہ بنایا گیا مگر واضح رہے کہ روس میں پیش آنے والا واقع چیچنز شدت پسندوں کی جانب سے ہوا تھا انکے مطابق یہ تھا کہ رشین لادین ہیں اور چیچنز کے  نزدیک رشین  کا قتل انکی آزادی اور نام نہاد اسلام کی خدمت کے مترادف تھا کیوں کہ چیچنز اپنی آزادی اپنی خودمختاری اور مخصوص مذہبی شناخت کو محفوظ رکھنا چاہتے تھے مگر سانحہ  پشاور اس سے زیادہ بدترین ہے کیونکہ اس واقعے میں ملوث دہشتگردوں کا تعلق کسی اور قوم مذہب  سے نہیں تھا مرنے والے بھی کلمہ گو تھے اور مارنے والے بھی کلمہ گو .
پشاور  کے آرمی اسکول میں بچوں کی شہادت  نے پوری  قوم کے جذبات کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا ہے کہ اب دہشتگردوں کو صفحہ ہستی سے مٹانے کا وقت آگیا ہے مگر دہشتگردوں کی ظالمانہ کاروائیوں  کے باوجود کچھ سیاسی و مذہبی جماعتوں کی طالبان سے ہمدردیاں ختم نہیں ہورہی ہیں اب قوم کا فرض بنتا ہے کہ عوام  ایسی مذہبی و سیاسی جماعتوں کا بائیکاٹ کرے  اگر اب  بھی ہم طالبان کی حمایت یافتہ سیاسی و مذہبی جماعتوں کے ہاتھوں بے وقوف بنتے  رہے تو دہشت گرد یوں ہی ہمارے درمیان پنپتے رہینگے

   میں پاکستان  کے نامور تجزیہ نگار  کالم نگار  اینکرز پرسنز اور جرنلسٹس سے کہنا ہوں  کہ ہمارا فرض بنتا ہے کہ  ایک صحافی، تجزیہ نگار ، لکھاری، بلاگر اور  ایک باشعور انسان ہونے کے ناطے ہم حق کو حق  سچ کو سچ بولیں اور لکھیں خواہ وہ سچ کسی  سیاستدان کے خلاف ہو یا کسی کے بھی خلاف ہو  ہمیں سیاسی تنگ نظری سے بالاتر ہوکر حقائق بیان کرنا چاہیے.
میں آخر میں پشاور سانحے میں شھید ہونے والوں کے لواحقین سے دلی ہمدردی کا اظہار  کرتا ہوں اور  سانحہ پشاور کے تمام شہداء قومی شہداء ہیں اور میں انھیں خراج عقیدت پیش کرتا ہوں.
نونہال شہداء کے والدین کو صبر کی استدعا کرتےہوے یہ کہنا چاہوںگا کہ آپ کے پیاروں اور لخت جگروں کے خون کا ایک ایک قطرہ استحکام پاکستان کی ضمانت بنے گا بلکہ انکی اس بے حد و بے پناہ قربانی کے صدقے آپ  کو اجر عظیم سے نوازا جاۓ گا. آ مین

Face Saving

As a political worker I am disgusted, extremely disgusted. I am shocked; I am saddened on Peshawar Incident and the memories of the people of Pakistan. 840 more words

Amber’s Salon & Training Institute Karachi – Complete Details

Amber’s Salon & Training Institute Karachi is known for its excellent quality services. This salon not only a recognized training institute for aspiring your beauticians but it is also famous for its classic makeup services. 174 more words

Beauty Advise

Between the Taliban and ghost schools, an entire generation in Pakistan is being lost

Tuesday’s attack in Peshawar wasn’t just an ordinary terrorist attack; it was an attack on our children, and their right to an education.

I teach at the largest university in Pakistan, and the day after the Peshawar massacre, the campus wore a deserted look. 464 more words

Jack reblogged this on Universal Journal Review.

Female Business Development Officer / Assistant Manager - Karachi

We are Looking for Good Looking, Slim and Smart Females are required as Personal Secretaries.
Based on your Qualification and Performance during the initial few months, two of the Secretaries will be promoted to the position of “Business Development Executive and/or Assistant…