Tags » Assignment No. 3 – Review Episode 3 Of Newsroom

١١۔۔٩ واقعہ کی معزرت

فلمی تبصرہ

تعارف:

سیاست اور ملکی دفاع بہتر طور پرکرنا قدرے مشکل کام ہے کہ ایک سیاستدان یا ایک سپاہی کو ہرقسم کے ماحول کو مدِ نظررکھتے ہوئے معاشرے کی خوشحالی کیلیئے کام کرنا ہوتا ہے، ان مقاصد کے حصول کیلیئے صرف سیاستدان یا سپاہیوں کی باگ دوڑ ضروری نہیں ہے بلکہ دیگر کئی اور عوامل یعنی میڈیا، اخباری نیوز ایجنسیوں کا بھی بروقت اپنی خدمات کو پوراکرنابھی ضروری ہوتاہے۔

زیرِ غور:

تبصرے کیلیئے زیرِ غورڈرامہ دی نیوز روم کی قسط نمبر۳ہے، جوکہ امریکی نیوزروم اور صحافتی افعال اور امریکی سیاست کو واضح کررہی ہے ۔ قسط ۸ جولائی ۱۲ہ۲ میں ریلیز ہوئی اسکا مکمل دورانیہ ۵۸ منٹ اور۴۲ سیکینڈ ہے۔

ہدایتکار:

ایرن سورکن کی ہدایتکاری میں یہ ڈرامہ تخلیق کیاگیا ہے۔

مرکزی کردار:

نیوزروم کے مرکزی کردار جیف ڈینیئیل (ول میکیوی) اور ایمیایئیلی مرٹمر ( میکینزی) اورسیم واٹرسن (چارلی اسکینر) ہیں۔

دیگر کردار:

جون گیلیگر(جم ہاریر) ، ایلیسن پل(میگی)، تھامسن سڈوکسی( کیفر)، ڈیویڈ پاٹیل ( نیئیل سامپت) ہیں۔

کہانی:

بنیادی طور پرخبروں کے شوقین افراد کی پیشِ خدمت ہے یہ قسط، لیکن بہرحال مغربی معاشرے کی چند تلخ اور نازیباں حرکات بھی اس قسط میں موضوع بنائی گئی ہیں۔

خلاصہ:

سنسنی صورتحال میں قسط کی شروعات ہوتی ہے جہاں 2004 میں ہونے والا 11۔9 کا حادثہ جس میں ایک مسلمان شخص اسامہ بن لادن نے ورلڈ ٹریڈ سینٹر کو دھماکے سے اڑادیاتھا، اس حادثے کے متعلق سابق سربراہ انسدادِ دہشتگردی رچرڈ کلارک اپنی قوم سے معافی مانگ رہے تھے انکی اس معافی کے بعد بعد ول میکوی اپنے ظرین عوام کوحقیقی معلومات فراہم نا کرنے اور ناقص رپورٹنگ کے عوض پر تنقیدی تقریر و بحث ومباحثہ کرتے ہیں ، اس میں مورثی صحافت کا انکار کرتے ہیں، کیونکہ انکے مطابق اس قسم کے واقعات کی صحیح انداز میں رپورٹنگ کرنا بھی میڈیا کا فعل ہے جسکو نظرانداز کردیا جاتا ہے، اسلئے آئندہ اس قسم کے واقعات کی روک تھام کیلیئے سچائی اور صداقت کے ساتھ ہر بات کو واضح کرنا ضروری ہے۔

اگلے پہر چارلی اسکنر جو چینل کے سربراہ ہیں چینل مالکان کے ساتھ میٹنگ میں نیوز نائٹ کے نئے فارمیٹ کی حامی کرتے ہوئے دکھائی دیتے ہیں، چارلی اسکینر نیوی رٹیائرڈ افسر ہیں ، اس میٹنگ میں نیوز نائٹ شو اور اے سی این چینل کی چھ ماہ کی کارکردگی اور نیوز نائٹ میں زیر بحث ہونے والی خبروں پر تفصیلی جائزہ لیاجارہا ہوتا ہے، اس میں سب سے زیادہ ٹی پارٹی پر گفتگوشنید ہوتی ہے،جس میں کانگریس کے سابق حکام اور، بزنس مین وغیرہ شامل ہیں اس میٹنگ میں چینل کے دیگر ادارے مارکٹنگ، فائنانس،اور دیگر ڈپاٹمنٹ کے سربراہ بھی شامل ہیں،

مکینزی اور میکوی کے درمیان تلخیاں بڑھ جاتی ہیں، کیونکہ ول میکوی مختلف لڑکیوں کے ساتھ ملاقاتیں کرتے ہیں۔ جم اور میگی کے قریبی تعلقات بڑھ جاتے ہیں کیفر ہیجان کا شکار نظرآتاہے۔، الیکشن کا سماء ہے الیکشن ٹرانسمیشن کے ایک وقفہ کے دوران کیفراور اینکر کی تلخ کلامی ہو جاتیے ہے جس کو وہ فوری حل کرلیتے ہیں،اسی ٹرانسمیشن کے اختتام پر ول مکینزی سے بات کرنے کے لیے جاتے ہیں لیکن مکینزی کے نیئے بوائے فرینڈ کودیکھنے کے بعد ول بات کئے بغیر وہاں سے چلا جاتا ہے۔

اے سی این چینل کے مالکان اور صدر کے ہمراہ ہونے والی میٹنگ میں صدر لیونا لانسگ سب کو میٹنگ روم سے جانے کے بعد چارلی اسکنر سے بات کرتی ہیں جس میں یہ واضح بتاتی ہیں کہ ادارہ کسی صورت ریٹنگ ،کمرشل پر نقصان نہیں اٹھائے گا اور اگر ایسا نہ ہواتو وہ ول میکوی کو نوکری سے نکال دیں گے۔

حٓاصلِ سبق:

اس قسط سے امریکی سیاست اور نیوز مالکان کی چینل کے متعلق پالیسیاں زیرِ غور ہیں۔ روایتی اور حقیقی صحافت کے درمیان فرق کو ختم کرناآج بھی ممکن نہیں ہے کیونکہ کوئی بھی ادارہ غیرجانبداری سے نہیں چل سکتا۔

حرفِ آخر

حقیقی زندگی اور پیشہ ورانہ زندگی انفرادی طور پر ہی متوازن چل سکتی ہے، اس قسط میں ول میکیوی، میگی ، ہارپر،میکینزی کی زندگی ان دونوں مناظروں میں گھری ہوئی نظرآتی ہے۔

Assignment No. 3 – Review Episode 3 Of Newsroom

The NewsRoom Review Season1 EP 3

ائیٹر:آرون سورکن
ڈائریکٹر:ایلکس گریوز
میوزک:ایلکس ورمان
کاسٹ:جیف ڈینیل،ایمائلی موٹیمر،جون گلیگہر،علیسن پل،تھومس ساروسکی،دیو پاٹیل،اولیویا من ،سیم وائرسن

نیوز روم   قسط نمبر3:

نیوز روم  کی تیسری قسط نیوز نائٹ کےشوکے  آغاز  سے ہوتی ہے جس میں رچرڈ کلارک نے  2004 میں 11-9 کے حادثہ کے متعلق اپنی قوم سے معافی مانگی تھی اس کا ایک مختصر سی کلپ چلائی جاتی ہے ،اس کلپ کے بعد ول میکوی اپنے

نا ظرین سے ملک کی بہتر معلومات فراہم نہ کرنے اور ناقص اور بے کار رپورٹنگ کر نے پرذاتی طور پر معافی  مانگتے ہیں جس میں صرف وہ شامل ہے کوئی اور اینکر یا  ذرائع ابلاغ کا کوئی ایسا فرد شامل نہیں ، اس میں مورثی صحافت کا انکار کرتے ہیں ،وہ اپنےپروگرام  میں  محض عوامی  مسائل اور ہر قسم کے حقائق پرمشتمل  ہو گی ،دوسری طرف چارلی اسکنر  جو چینل کے سربراہ  ہیں اور سابق  نیوی  رٹیائرڈ ہیں،وہ  چینل مالکان کے ساتھ میٹنگ میں نیوز نائٹ کے نئے صورت (فارمیٹ)  کا دفاع کر رہے ہیں، اس میٹنگ چھ ماہ کی کارکردگی اور اس دوران نیوز نائٹ میں زیر بحث خبریں آتی ہیں، اس میں سب سےپروگرام کے مختلف عنوانوں پر ریٹنگ سے متعلق بحث ہوتی ہے جس میں سب سے بحث  (ٹی پارٹی ) پرہوتی ہے ، اس  میں کئی طرح کے لوگ مثلاء کانگریس کے سابق لوگ ، بزنس مین شامل ہیں ،اس میٹنگ میں چینل کے دیگر ادارے مارکٹنگ ،فائنانس ،اور دیگر ڈپاٹمنٹ  شامل ہیں ، چند ماہ  کے دوران  مکینزی اور میکوی کے درمیان تلخی  بڑھتی ہے جب کئی بار ول میکوی مختلف پیشوں کی لڑکیوں کے ساتھ گھومنے جاتے ہیں دوسری طرف  جم اور مارگریٹا  بھی قریب آتے اآتے رہ جاتے ہیں ،  اور پھر الیکشن کی رات  آتی ہے

الیکشن ٹرانسمیشن کے ایک وقفہ کے دوران ڈان کیفر کی اپنے اینکر سے تلخ  کلامی ہو جاتی ہے جس کو صبر و تحمل اختیار کرکے بات چیت سےمعاملے کو حل کرتے

ہیں ۔۔

اسی وقفے کے دوران  ول مکینزی سے کچھ کہنے کے لیے آتے ہیں کہ تبھی مکینزی کا نیا بوائے فرنڈ آجاتا ہے اور ول بات مکمل کرے بغیر وہاں سے روانہ ہو جاتا ہے ، مالکان اور پریذیڈنٹ کے درمیان ہونے والی میٹنگ میں صرف  لیونا  لانسگ جو چینل کی مالک ہے سب کو میٹنگ روم سے جانے کے بعد چارلی اسکنر سے بات کرتی ہیں جس میں یہ واضع کرتی ہیں کہ ادارہ کسی صورت ریٹنگ یا کمرشل پر سمجھوتا نہیں کرے گا اور اگر ایسا ہی چلتا رہا تو وہ ول میکوی کو فارغ کر دیں گے ، اختتام میں ٹرانزمیشن کے انینکرز ، چارلی اسنکر ،ول میکوی ،جم ہیپر بار میں بیٹھے جشن منا رہے ہیں

Assignment No. 3 – Review Episode 3 Of Newsroom

The news room review ep3 season 1.

نیوز روم کی تیسری قسط نیوز نائٹ کے نام سےشو شروع ہوتی ہے ، رچرڈ کلارک نے 2004 میں 11-9 کے حادثہ سےمتعلق اپنی قوم سے معافی مانگی تھی اور ایک مختصر کلپ چلایا جاتا ہے ، کلپ کے بعد ول میکوی اپنےنا ظرین سے ملک کی بہتر معلومات فراہم نا کرنے اور ناقص رپورٹنگ کر نے پرذاتی معافی مانگتے ہیں جس میں صرف وہ شامل ہے کوئی اور اینکر یا ذرائع ابلاغ کا کوئی کارندا شامل نہیں ہوتا، دوسری طرف چارلی اسکنر جو چینل کے سربراہ ہیں چینل مالکان کے ساتھ میٹنگ میں نیوز نائٹ کے نئے فارمیٹ کا دفاع کر رہے ہیں چارلی اسکنر نیوی رٹیائرڈ افسر ہیں ، اس میٹنگ میں چھ ماہ کی کارکردگی اور اس دوران نیوز نائٹ میں زیر بحث خبریں آتی ہیں اس میں سب سے زیادہ (ٹی پارٹی ) زیر بحث ہوتی ہے ، جس میں کئی طرح کے لوگ مثلاً کانگریس کے سابق بزنس مین شامل ہیں، اس میٹنگ میں چینل کے دیگر ادارے مارکٹنگ ،فائنانس ا ڈپاٹمنٹ شامل ہیں ، اس دوران مکینزی اور میکوی کے درمیان تلخی بڑھتی ہے جب کئی بار ول میکوی مختلف پیشوں کی لڑکیوں کے ساتھ ڈیٹ پر جاتے ہیں ، اس طرح جم اور مارگریٹا بھی قریب آتے اآتے رہ جاتے ہیں ، اور پھر الیکشن کی رات آتی ہے۔
الیکشن ٹرانسمیشن کے وقفے کے دوران ڈان کیفر کی اپنے اینکر سے تلخ کلامی ہو جاتی ہے جس کو وہ فوراً حل کرلیتے ہیں۔
ٹرانسمیشن کے اختتام پر مکینزی کا نیا بوائے فرینڈ آجاتا ہے اور ول کی بات مکمل کرے بغیر وہاں سے چلا جاتا ہے ، مالکان اور پریذیڈنٹ کے درمیان ہونے والی میٹنگ میں صرف لیونا لانسگ جو چینل کی مالک ہے سب کو میٹنگ روم سے جانے کے بعد چارلی اسکنر سے بات کرتی ہیں جس میں یہ واضع کرتی ہیں کہ ادارہ کسی صورت ریٹنگ یا کمرشل پر سمجھوتا نہیں کرے گا اور اگر ایسا ہی چلتا رہا تو وہ ول میکوی کو فارغ کر دیں گے ، اختتام میں ٹرانزمیشن کے انینکرز ، چارلی اسنکر ،ول میکوی ،جم ہیپر بار میں بیٹھے جشن منا رہے ہیں۔

Assignment No. 3 – Review Episode 3 Of Newsroom

NEWROOM EP 3 SEASON 1

نیوز روم قسط ۳

نیوز روم کی تیسری قسط کی شروعات نیوز نائٹ سے ہوتی ہے،جس میں رچرڈکلارک 9-11 کے حادثے کے لیے قوم سے مافی مانگتے ہیں۔ملک کی ٹھیک معلومات نہ دینے کی وجہ سے ول لوگوں سے مافی مانگتے ہیں اور وہی شامل ہوتے ہیں کوئی اور اینکر نہیں ہوتا۔دوسری بات یہ کے چارلی اسکنر ایک میٹنگ کرتے ہیں،اس میٹنگ میں مختلف چینل کے ادارے کے لوگ آتے ہیں اسکے بعد الیکشن کی رات آتی ہے اور اس میں ڈان کیفر کی اپنے اینکر سے بحث بازی ہوجاتی ہے۔

Assignment No. 3 – Review Episode 3 Of Newsroom

"نیوز روم کی تیسری قسط پر تبصرہ" ٓ


آرون سورکن کی ٹیلی ویژن سیریز”دی نیوز روم”۲۰۱۲میں ایچ بی او پرنشر کی گئی جس میں مرکزی کرداد جیف ڈینیل اور ایما ئلی مورٹیمر نے ادا کیا جبکہ ڈائریکڑکے فرائض ایلکس گریوز نے سرانجام دئیے۔دی نیوز روم صحافت کے پیشے سے وابسطہ افراد کی زندگی کے گرد گھومتی ہے۔ایک صحافی کو اپنی روزمرہ کی زندگی میں کن چیلنجز کا سامنا کرنا پڑتا ہے اس کی یہ بہترین عکاسی کرتی ہے۔

قسط کاآغازرچرڈ کلارک جوکہ انسداد د ہشتگردی فورس کے سابق چیف ہوتے ہیں ان کے معافی نامے کی ویڈیو کلپ سے ہوتا ہے جس میں وہ امریکا کی عوام سے ۱۱ستمبر،۲۰۰۱ کو ہونے والے دہشتگری کے واقع پر قوم سے معافی مانگتے ہیں۔ول میک اپنے پروگرام میں اس موضوع کو زیر بحث لاتے ہیں تاکہ عوام حقائق جان سکے اور مستقبل میں اس طرح کے واقعات نہ ہوں ان کی روک تھام کے لیے اقدام کیے جاسکیں ۔ول نیوز چینلزکو بھی اس طرح کہ پیش آنے والے واقعات کا قصور وار سمجھتے ہیں کیوں کہ انکے نزدیک چینلز ریٹنگ کی وجہ سے وہ حقائق اور معلومات فراہم نہیں کرتے جو انہیں کرنا چاہیئے۔ول کے اس پروگرام کو لیکر چینل کی مالکن اور چارلی کے درمیان تکرار آ جاتی ہے کیوںکہ ول کے اس پروگرام سے اس کی ریٹنگ میں کمی واقع ہوتی ہے۔

کہانی میں نیا موڑ اس وقت آتا ہے جب ول میک ایک روز نیویارک جیٹ فلائٹ کی چیئر لیڈر کے ساتھ سیر کے لیے چلے جاتے ہیں تو دوسرے روزکسی اور لڑکی کے ساتھ یہ بات میکینزی کو ناگوار گزرتی ہے۔ میگی میکیزی کے دلی جذبات کو سمجھتے ہوئے ول کو تجویزکرتی ہے کہ آپکو میکینزی کواپنے ساتھ باہر لیکے جانا چاہیئے۔ ول میکینزی کے پاس بات کرنے کے ارادے سے پہنچتا ہے تو اسے معلوم ہوتا ہےکہ میکیزی ۳ ماہ سے کسی اورکے ساتھ تعلقات قائم کیے ہوئے ہے۔ جبکہ دوسری جانب میگی اور ڈان کی رغبتیں بڑھتی جارہی ہیں، جس سے جم خاصہ افسردہ اور پریشان دیکھائی دیتا ہے۔

Assignment No. 3 – Review Episode 3 Of Newsroom

(دی نیوز روم (تیسری قسط

تبصرہ

اس ڈرامہ کے مصنف آرون سورکن ہیں ۔تیسری قسط  کی شروعات “رچرڈ کلارک انٹی ٹیریریزم فورس کا چیف” کی ویڈیو کلپ سے ہوتی ہے۔ جس میں وہ امریکی عوام  سے نائن الیون کے واقعات پر معافی مانگتا ہے ۔ ۔نیوز اینکر ول اس پر پروگرام کرتا ہے اور اس موضوع پر بحث کرتا ہے ، حقائق سے آگاہ کرتا ہے  اور اشتہارات کی پالیسی پر عمل کرنے سے انکار کرتا ہے ۔ چینل کی مالکن چارلی سے بات کرتی ہے کہ ول میک ایوے کے پروگرام سے   ریٹنگ کافی کم ہو گئی ہے اگر ول نے پالیسی پر عمل نہ کیاتو اسے نوکری سے نکال دے گی ۔

ایک دن ول میک ایک لڑکی کو باہر لے کر جاتا ہے یہ بات میکنزی کو بری لگتی ہے اور دوسرے دن آفس میں نئی لڑکی آجاتی ہے اور ول اسے بھی باہر سیر کیلئے لے جاتا ہے۔پھر میگی جو ایگزیکیوٹیو پروڈیوسر ہوتی ہے ول کو کہتی ہے کہ آپ ایسا نہ کریں میکینزی کو بُرا لگتا ہے۔ پھر ول کو اس بات پر غصہ آجاتا ہے لیکن پھر ول میک ، میکنزی سے ملنے جاتا ہے وہاں اس کے ساتھ لڑکا کھڑا ہوتا ہے۔ پھر میکنزی ول کو بتاتی ہے کہ یہ اس لڑکے کے ساتھ تین مہینے سے بات چیت کرتی ہے۔اور یہ میرا بوائے فرینڈ ہے۔

Assignment No. 3 – Review Episode 3 Of Newsroom

"نیوز نائیٹ شو"

:تبصرہ

تیسری قسط کی شروعات ایک ویڈیو کلپ سے ہوتی ہے جس میں سابق صدر جارج بش کے دور میں دہشت گردی پر چیف رچرڈ کلارک کانگریس کی کمیٹی کے سامنے ۹/۱۱ میں اپنی ناکامی کا اعتراف کرتے ہوئے امریکی عوام سے معافی مانگتے ہیں . رچرڈ کلارک کا کہنا تھا کہ امریکی گورنمنٹ عوام کی توقعات پرپورا نہیں اُ ترسکی اور ان کی حفاظت کرنے میں ناکام رہی۔اس کے بعد نیوز ناہٹ کے اینکر ول میک انسداد دہشت گردی کے چیف رچرڈ کلارک کے اعتراف کو سراہتے ہوئے کہا کہ امریکی عوام کو یہ پسند آیا اور ان کو خود بھی اچھا لگا. ول میک کا کہنا تھا کہ لوگوں کو اپنی غلطیوں کیلئے جواب دہ ہونا چاہئیے ۔ ول میک نے اپنے پروگرام کی طرف سے معافی مانگتے ہوئے ایک ایسی حقیقت سے پردہ اٹھایا جو حیران کُن تھا۔ول نے اپنے چینل کی پالیسی کے خلاف جاتا ہے اور کہتا یے کہ آج سے ریٹنگ کی فکر کیے بغیرسچ اور حقائق پر مبنی خبر شایع کی جائے گی اور اشتہارات کی پالیسی کو ختم کیا جائےگا۔ ول کی اس بات پر چینل کی مالک بے حد غصہ ہوجاتی ہے،اور چارلی کو ول کو سمجھانے کے لیے کہتی ہے اور مزید کہتی ہح کہ اگر ول نے پالیسی کی خلاف ورزی کی تو اُس کو یہ نوکری چھوڑنی پڑے گی۔

Assignment No. 3 – Review Episode 3 Of Newsroom