Tags » Birthday » Page 2

Alright

My dear,
I’ve seen the sky pouring so hard
like it was cut open,
and all the water it contains
just escapes like baby goats… 150 more words

Poem

The Father's Blessing 3

Without a Father, one is a bastard. Anyone with a father cannot go further. Fathers are spiritual ladders used by God to preserve the destinies of men. 95 more words

Supernatural Abundance

A Discovery

There’s just something crazy interesting about life that I’ve discovered recently. Sometimes the things you absolutely hate when you were younger become your favorite things when you get older. 318 more words

برحنہ تحفہ

آج عبداللہ نے اپنے دوست عابدکو ایک کتاب اور وہ بھی بغیر گفٹ پیپر کے تحفہ دی۔ دوست نے شکریہ کے ساتھ ساتھ برحنہ تحفہ دینے کا شگوہ کیا۔ جو شکوہ کم حیرت میں کیا ہوا رد عمل زیادہ تھا۔ عبداللہ نے مسکراتے ہوئے ایک تحفے کی اہمیت اور اس پر چڑھا گفٹ پیپر دکھایا۔
“دیکھوجس طرح گفٹ پیپر اپنے اندر چھپے تحفے کی نشاندہی کرتاہے ۔ اسی طرح کتاب کی جلد اپنے اندر موجود خزانے کی موجودگی ظاہرکرتی ہے۔ جیسے گفٹ پیپر پر لکھے نام سے تحفہ دینے والی مہان شخصیت کا پتا چلتا ہے، ایسے ہی کتاب پر لکھے مصنف کا نام یہ بتاتا ہے کہخزانہ چھپانے والے سونار کون ہیں۔ جیسے گفٹ پیپر کھولتے ہی تحفے کا معلوم پڑتا ہے کہ تحفے میں کیا چیز دی گئی ہے بالکل ایسے ہی کتاب کے عنوان سے اس بات کا علم ہوتا ہے کہ خزانے میں کیا کچھ چھپا ہو سکتا ہے۔جیسے تحفے پر تمام تفصیلات بتاتی ہیں کہ یہ کتنا قیمتی ہے؟ کہاں کہاں کام آ سکتا ہے؟ کیسے استعمال کیا جائے؟ اسی طرح کتاب کی’ فہرست مضامین‘ اس کے بیش قیمت خزانے تک پہنچنے کا نقشہ کھینچتی ہے۔جیسے تحفے کا’ برانڈ‘ شے کو اسکی اصل حالت میں ڈالنے والی کمپنیی کی مارکیٹ ایکسپٹینس ظاہر کرتی ہے،کتاب کا ’جملہ حقوق بحق‘ اس قیمتی خزانے کوصندوق میں بند کرنے والے کے مستند ہونے کا یقین دلاتا ہے۔
کتاب کی جلدہی اسکا گفٹ پیپر ہے دوست۔ جبکہ تحفہ تو کتاب کے اندر الفاظ میں پہناں ہے۔اب یہ آ پ پر منحصر ہے کہ اس زروجواہر کی کھوج لگا کرکتنا سامان سمیٹتے ہو۔”
عبداللہ نے عابد کے چہرے کے تاثرات سے بھانپ لیا تھا کہ وہ سالگرہ کے اس موقع پر بظاہر فلسفیانہ گفتگو سے اکتا رہا ہے۔ لہٰذہ اس نے بات کو یو- ٹرن دیتے ہوئے کہا ،”تو جب آپ اس نادر خزانے کو دھونڈ نکالیں تو اس میں سے ایک لعل مجھے دے دیجیئے گا۔ میں منہ دکھائی میں اپنی زوجہ کو دینا چاہتا ہوں۔”
یہ سنتے ہی اسکا دوست کھل کھلا کر ہنس دیا۔ اس بار عابد کا شکریہ ممنونیت میں بدل گیااور کتاب مکمل پڑھنے کے بعد عبداللہ کے ساتھ اس کتاب کا خلاصہ پر گفتگو کرنے کا وعدہ بھی کیا۔

(نویداسلم)

Urdu Prose

Spending Your Birthday In The Psych Ward

I was looking through some old boxes for some pictures I had taken a couple a years ago. I had conveniently found old birthday messages from staff members at the hospital. 807 more words

Birthday

A Welcome arrival to Skipton!

Having seen all the work going on recently in Skipton Town Hall I was intrigued to know why a restaurant chain such as Wildwood would want to lay its roots down in Skipton and wanted to delve further. 794 more words

Food

In Honour of Joan Fontaine on her Heavenly Centenary

Do you remember the first time you ever heard about the more than extraordinary Joan Fontaine? I do as if it was yesterday. I was looking at this book called… 1,273 more words