Tags » Electronic Media

Media Innovation Lab Coming Soon

The School of Journalism and Mass Communication has add a new addition to the program. Starting this fall, students will be able to receive a BS in Digital Media Innovation.  64 more words

Texas State University

Sex & the City & Feminism

Dissecting Sex in Sex and the City

In the era following the reclaiming of sexuality in second-wave feminism and rapid globalization, television became an outlet in which sex—specifically females and sex—became a topic more widely accepted in broadcasting. 2,961 more words

Writing

پاکستانی صحافت کی بطخیں

پاکستانی میڈٖیا بھی کیا خوب ہے، آزاد ہے مگر معلوم نہیں آزادی کے دنوں میں کرتے کیا ہیں؟ اس پر یہ بھی کہ قید کی زحمت اٹھائی نہیں، سو آزادی جیسی نعمت کی قدر کیا۔ جنہیں کوڑے لگے تھے ، ذرا غور کیجے کہ کیا آزادی کی خاطر لگے تھے؟ بھائی، قلم نہ معاشرے کا غلام ہوتا ہے نہ نفسانی خواہش کا۔ ہاں قلم والا ہو سکتا ہے، سو پاکستان میں ہوا ہے بلکہ ہوتا ہی رہا ہے۔ ایک صحافی اس گود میں تو موقع دیکھ کر دوجا دوسری گود میں۔ گود سانجھی بھی ہو سکتی ہے اور اکثر گودیں تو ہیں سانجھی۔ گزشتہ کا صحافی علم سے ہوتا ہو گا، اب تو رقم سے ہوتا ہے۔ سازش اور صنف نازک سے بھی ہو سکتا ہے۔
بہر حال کیسے بھی ہوا ہو، یہ آج کا موضوع ہرگز نہیں ہے۔ کہنا تو یہ ہے کہ دنیا میں اخبار ‘خبر’سے ہوتا ہے ، پاکستان میں بیان سے۔ یہاں بیان ہی خبر کیوں ہے؟ بیان ہو گا تو جیب ہو گی مکان ہو گا۔ اپنا آباد دوجے کا سنسان، سناؤ بیان، چھاپو بیان۔ ہمارے یہاں ٹی وی پر بیان ہیڈ لائن ہوتی ہے، اخبار میں سپر لیڈ۔ ہاں یہ پوچھنا (جو کام ہے صحافی کا کہ بیان پر عمل ہوا یا نہیں۔۔؟) یہ کوئی نہیں کرتا۔ پوچھیں گے تو پیسے کٹیں گے، مارکیٹ میں دام گھٹیں گے۔ سو پوچھیں تو ، مگر کیسے پوچھیں۔ ٹی وی دیکھو تو رپورٹر وہ کہ لفظ شرمائے، آئینہ لجائے۔ نہ سنے بھائے، نہ دیکھے بھائے۔ پوچھو یہ کیوں کر صحافی ہے ۔۔تو جواب ملے کہ خبر اچھی لاتا ہے۔ بھائی پیسے بھی تو اچھے بناتا ہے۔ جیسے ادارہ کاروبار، ویسے ہی صحافی کا ویہار۔
پاکستان میں ٹی وی دیکھو تو جلتی پر تیل۔ دنیا بھر میں ٹی وی دکھانے کا نام ہوتا ہے۔۔’شوبز’ جو ہوا۔۔پر ہمارے یہاں پڑھانے کا ہوتا ہے۔ ایک ہی جملہ اوپر ، نیچے ، دائیں، بائیں۔۔ہر جانب لکھا ہوا ملتا ہے تو بندہ مومن سوچتا ہے خدارا۔۔کیا دیکھنے والے کی قوت نگاہ مشکوک ہو گئی ہے کہ ایک بار لکھا جملہ سمجھ نہیں آتا۔ بھائی پڑھانا ہے تو ٹی وی تو نہ کہو۔۔الیکٹرانک نیوز بک۔۔نامی کوئی نام؟؟۔۔۔چلے گا؟؟۔۔ہوں؟؟ اب ذرا ٹی وی کے سٹوڈیو چلیئے۔۔۔تو منظر کیا ہے۔۔۔بقولِ غالب۔۔۔بازیچہ ءِ اطفال ہے دنیا میرے آگے۔ اب کیاکیجے کہ سٹوڈیو میں وہ بچے ہوتے ہیں جنہوں نے ہوش و حواس کے عالم میں کبھی عملی صحافت کا نام بھی نہ سنا۔۔۔میدان میں صحافی کے مسائل، وسائل اور رسائل کو سمجھے تو بھلا کیسے۔ یہی حال نیوز رومز کا ہوتا ہے۔ کاپی پر بھلے کوئی مشاق ہی بیٹھا ہو، پروڈیوسرز کی 99فیصد آبادی کو نہ سیکھنے سے سرو کار، نہ سر پہ تجربے کا بار۔

ابھی یہ تحریر ادھوری ہے دوستو۔ دامن وقت میں گنجائش کم ہے۔ اب کا باقی کام تب پر اٹھا رکھتے ہیں۔۔یار زندہ صحبت باقی۔

Opinion Journalism

Summer Sixteen

Welcome back, Bobcats! The well-anticipated Summer ’16 classes are now underway. We hope these past three weeks of summer vacation have given everyone a well needed break to come back refreshed and ready to start classes again. 132 more words

Students

The Chaos that Revolved Around Getting a College Admission

It’s hard for me to believe that I have graduated from school and now I’m about to start a new chapter in my life: College. The thought of college never terrified me, it excited me. 2,162 more words

India

Poet: The Struggles Black Women Face

This last post is no different than my last, it’s about black women. But in this post you will hear poet Kwyn Townsend Riley talk about the struggles that black women face in today’s everyday life. 74 more words

Electronic Media

Organization Helping Women Of Color In Communications Field

I read this article over at HuffingtonPost.com, where it explained how Lauren Wesley Wilson understood the many challenges like black woman herself who work in the communications field. 227 more words

Electronic Media