Tags » Ghazal

Like a madman...

مرے خوں سے حنائی کر دیکھیے، حسن اور سہانا کیا ہو گا؟

جینے  کا  بہانہ  توں  جو  نہیں،  مرنے  کا  بہانہ کیا ہو گا؟

 

آشفتہ سری اب ختم ہوئی، کے ہم پے نظرِ کرم ہوئی

Ghazal

23 March 2015...

I’ve had a bit of a love affair with Pakistan for many years. Admittedly, I was neither born in the country nor do I have any foolish patriotic notions about it. 317 more words

Ghazal

In each corner, breathed, news of our acquaintance (Ku-ba-ku phail gai baat shanasai ki)

– Rendered in his matchless voice by ghazal maestro Mehdi Hassan saheb

Translation:

In each corner, breathed, news of our acquaintance…
He praised me fluently like an imbue of fragrance… 200 more words

Translated Poem

Couplets (Zafar)

ख़ाकसारी के लिए गरचे बनाया था मुझे
काश ख़ाक-ए-दर-ए-जाना न बनाया होता
नशा-ए-इश्क का गर ज़ौक़ दिया था मुझको
उम्र का तंग न पैमाना बनाया होता.

Depression

From the Archives: Ghulam Ali

We go back in time to the early days of the Washerman’s Dog blog (before the advent of Harmonium) when we shared this all Punjabi folk album from the great Ghulam Ali. 87 more words

Pakistan

The Passion Entrapment (Daira-e-Mohabbat)

In an adolescence of union, settings for a year anew plays well…
In an entrapment of passion, beatings of heart-debut plays well…

With each meeting happens a new vow, for separation – a pledge, 282 more words

Poetry

وفا کا عہد تھا دل کو سنبھالنے کے لئے

وفا کا عہد تھا دل کو سنبھالنے کے لئے

وہ ہنس پڑے مجھے مشکل میں ڈالنے کے لئے

بندھا ہوا ہے بہاروں کا اب وہیں تانتا

جہاں رکا تھا میں کانٹے نکالنے کے لئے

کوئی نسیم ا نغمہ، کوئی شمیم کا راگ

فضا کو امن کے قالب میں ڈھالنے کے لئے

خدا نکردہ زمین پاؤں سے اگر کھسکی

بڑھیں گے تند بگولے سنبھالنے کے لئے

اتر پڑے ہیں کدھر سے یہ آندھیوں کے جلوس

سمندروں سے جزیرے نکالنے کے لئے

تری سلیقہ ترتیب نو کا کیا کہنا

ہمیں تھے قریۂ دل سے نکالنے کے لئے

کبھی ہماری ضرورت پڑے دی دنیا کو

دلوں کی برف کو شعلوں میں ڈھالنے کے لئے

کنویں میں پھینک کے پچھتارہا ہوں دانش

کمند جو تھی مناروں پہ ڈالنے کے لئے

(احسان دانش)

Ahsan Danish