Tags » K-2

A Simple Yet Costly Phonics Mistake

Phonics is one of the most mislabeled skills out there. People seem to think that it’s the easiest thing in the world to teach, which could be true if it’s taught correctly. 147 more words

Phonics

Happy Fall Y'all!

We are back and already almost to the end of the first quarter! Here are a few pumpkin life cycles my Kinders made recently after reading about pumpkins and going through the Super 3 process. 40 more words

What Pet to Get?

I introduced the Super 3 to my Kinders recently and wanted to use a real life situation to help them understand the process. So, we talked about getting a new pet. 129 more words

Research

پہاڑوں کے دیوتاوں کی سر زمین

پاکستانی کوہ پیماء کرنل عبدالجبار بھٹی نے ماونٹ ایورسٹ سر کر لی۔
خراب موسم کے پیشِ نظر، دنیا کے مشہور ایکسپلورر مائیک ہارن نے کے۔ٹو کو سر کرنے کا ارادہ ترک کر دیا۔<<<<
یرملکی کوہ میماؤں نے کے۔ٹو سر کر لی۔<<<<
ر ملکی کوہ پیما نانگا پربت کو سر کرنے کی کوشش میں جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

چند الفاظ پر مبنی یہ خبریں کبھی کبھار اخبار کے اندرونی صفحات کی زینت بنی تو نظر اتیں ہیں لیکن اِن الفاظ میں پوشیدہ ہمت، جرات، کاوش اور دل کو دہلا دینے والے واقعات کی تفصیلات لوگوں تک پہنچنےسے ہمیشہ قاصر رہتیں ہیں اور کوہ پیماء لوگوں کی داد اور حوصلہ افزائی سے محروم۔

کوہ پیمائی ایک پُر خطر اور انتہائی دشوار کھیل ہے، جس میں کبھی کبھار رننر اَپ کا تمغہ موت کی صورت میں اپ کے گلےمیں آ لٹکتا ہے۔ کوہ پیمائی میں کہیں تو فوری اور یقینی موت کے پھندے اپ کو پھانسنے کیلئے تیار کھڑے ہیں تو کہیں درد ناک سرد موت کے بلاوےاپ کے منتظر ہیں۔ کسی بھی پہاڑ کے غرور کو توڑنے کیلئے جہاں انتہا درجے کی ذہنی جسمانی پختگی، تکنیکی علوم سے وابسطگی اور مظبوط اعصاب درکار ہیں تو وَہی اُس پہاڑ کا اپ پر مہربان ہونا بھی بے حد ضروری ہے۔

کہیں تو پہاڑ ایولانچ (برفانی طوفان)کی صورت میں اپ پر حملہ اَور ہوتا ہے اور پلک جھپکتے اپ کو لاکھوں من برف کے نیچے دفن کر دیتا ہے تو کہیں سرکتے برفانی تودے کسی بھی لمحے اپ کو سرکا کر اگلے جہاں منتقل کرسکتے ہیں اور کہیں برف میں ڈھکی پیچ و حم کھاتی کریویس (دراڑیں) جو چند ہی میٹر کی گہرائی میں اپ کو ایسی تاریک اور بیہانک دنیا میں لے جاتیں ہیں جہاں سے ہر راستہ موت کی گھاٹی میں اترتا ہے۔

پہاڑوں کی بچھائی ہوئی اِس خونی بساط سے اگر اپ بچ بھی نکلےتو موسم اور بلندی کے جان لیوا گرداب کے شکنجے ایک بدصورت احساس کی مانند اپ کو دبوچنے کیلئے بے چین ہوتے ہیں۔اٹھ ہزار میٹر سے موت کا علاقہ یا ڈیتھ زون شروع ہو جاتا ہے، ہوا میں اکسیجن کا تناسب خطرناک حد تک کم ہو جاتا ہے جس نے پھیپھڑوں کی کارگردگی کو بری طرح متاثر کیے ہوتا ہے۔ بھاری پھیپھڑوں اور اکلیمٹایزیشن سے خون کےبہاو میں بگاڑ نے اپ کی رفتار کو ایک سست کچھوے کی رفتار کی مانند کیا ہوتا ہے اور بے رحم سردی ہاتھوں اور پیروں کی اُنگلیوں کو نوچ رہی ہوتی ہے۔

کوہ پیمائی کی یہ غضبناک وضاحتیں اگر اپ خوفزدہ کر رہیں ہیں اور اپ اپنا کوہ پیماء بننے یا کسی پہاڑ کے بیس کیمپ تک جانے کا ارادہ ترک کرنے کا سوچ رہے ہیں تو ٹہریے تارڑ صاحب یہ بات سنتے جائیں
کہتے
ں سے پیار کرتا اور اُن کی کشش کو اپنے اندر سمو لیتا ہے وہ ہمیشہ کے لئے متلاشی رُوح بن جاتا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔ ہمالیہ کی بلندیوں پر دیوتاؤں کو دیکھتا ہے۔ ماونٹ اولمپس پر جاتا ہے۔ ہندوکش کی ازلی برفوں میں اپنے خدا تلاش کرتا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔نوح کی کشتی بھی بالاآخر کوہِ آرارات پر جا ٹھرتی ہے۔حضور صلعم بھی غار حرا میں روشنی پاتے ہیں۔حضرت موسی کوہِ طور پر جاتے ہیں اور ہم کلام ہوتے ہیں۔”

کبھی کوئی پہاڑ مجھ پر بھی مہربان ہوا تو اس کی عظمت اور جاہ و جلال کے درشن کرنے تو یقینً جاؤ گا لیکن تب تک اِن پہاڑوں کے دامن میں حاضری دے کے اپنا نظرانہِ عقیدت ضرور پیش کرتا رہوں گا۔

پہاڑوں کی سر زمین ہونے کے باوجود ملکِ خداداد میں کوہ پیمائی کو خاطر خواہ پزیرائی نہ مل سکی، کچھ تو اربابِ اختیار کی ستم ظریفی کہ دنیا کہ اِن عظیم پہاڑوں کی اہمیت اور کوہ پیمائی جیسے سنسنی خیز کھیل میں لوگوں کی دلچسپی کو اجاگر نہ کر پائے تو کچھ ہم لوگوں کا شاہانہ ، نازک اور آرام طلب مزاج جس نے کرکٹ جیسے افسری کھیل کو تو بخوبی اپنا لیا لیکن کوہ پیمائی کی سختیوں اور مشکلات کو جھیلنے کیلئے بلکل بھی آمادہ نہ ہوا۔

قدرت نے اس ملک کو ہر قسم کے منفرد اور خوبصورت لینڈ سکیپ سے تو نوازا ہی ہے لیکن پہاڑوں کی دین کے معملے میں کچھ زیادہ ہی مہربان ہے۔ یہ اعداد کسی حیرت سے کم نہیں کہ اٹھ ہزار میٹر بلند دنیا کی 14 چوٹیوں میں سے 5 اور سات ہزار میٹر سے بلند 94 چوٹیوں میں سے 36 پاکستان میں واقع ہیں۔ چار پانچ ہزار میٹر بلند چوٹیوں کا کوئی شمار ہی نہیں جبہی کسی نے پاکستان کو “پہاڑوں کے دیوتاوں کی سر زمین” لکھا تو کسی نے “دی لینڈ اف مائیٹی ماونٹینز” کا نام دیا۔قدرت کے ان انمول اور عظیم شاہکاروں کی عظمت اور جلال کو لوگوں تک پہنچانے میں ابھی بھی کافی گنجائیش باقیہے۔

 

K-2

Kindgergarten Math Using Soup Beans: Number Sense #3

In this installment of number sense activities, I’ll be describing ways to reinforce the pairing of numerals with depictions of the numbers. The activities will also seek to reinforce the concept that the number of items is not affected by how objects are arranged or how they look. 805 more words

Math

Oh, No!

Oh, No! written by Candace Fleming and illustrated by Eric Rohmann is a tale of jungle suspense as animal after animal falls into a pit! Who will come to rescue them from the tiger, hungry for a snack?! 49 more words

6 Traits Books

Into the A, B, Sea by Deborah Lee Rose'

Summary:

This is a delightful alphabet book full of animals, color, and letters. It is sure to grasp the interest of any child learning their alphabet. 46 more words

K-2