Tags » Mo Farah

Athletics might have picked itself off the floor, but there is still a long way to go

Heading into 2017, there was a lot of controversy surrounding the survival of athletics and reengaging with youth. With Mo Farah leaving the track and Usain Bolt retiring, the sport was in need of new superstars. 677 more words

Sports

12 Sept - Don't Mess with Mr Smooth

It’s a new dawn, it’s a new day and I’m feeling good, so says Nina and I believe her. Today I leave the hills and go to the pista in Fano, for special interval training. 704 more words

Running

Mo Farah to debut as a full-time road runner at 2018 London Marathon

Mo Farah will begin the next chapter of his career in front of his home fans, announcing that he will run the 2018 London Marathon on April 22. 275 more words

Track And Field

Who will be on the Jonathan Ross show on Saturday night?

The Jonathan Ross Show is back on our screens with a healthy dose of chit chat and the usual line-up of celeb guests this weekend. 371 more words

TV

مجھے اب محمد کے نام سے پکارا جائے

طویل دوڑوں کے بادشاہ کہے جانے والے برطانوی ایتھلیٹ سر مو فرح نے کہا ہے اب انھیں ‘محمد’ کے نام سے پکارا جائے۔ اس کے ساتھ انھوں نے اپنے ناقدوں کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ میڈیا ان کے کارناموں کو ‘تباہ کرنے’ کی کوشش کر رہی ہے۔ خیال رہے کہ یوسین بولٹ کی طرح محمد فرح کی میدان سے رخصتی امید کے مطابق نہیں رہی کیونکہ وہ پانچ ہزار میٹر کے مقابلے میں دوسرے نمبر پر آئے اور نقرئي تمغے کے حقدار ٹھہرے۔ انھوں نے برطانیہ میں جاری ورلڈ چیمپیئن شپ کا آغاز دس ہزار میٹر ریس میں طلائي تمغہ حاصل کر کے کیا تھا۔ اب وہ سڑک پر ہونے والی میراتھن ریس کی جانب جانا چاہتے اور ایک نیا آغاز کرنا چاہتے ہیں اور اس لیے انھوں نے اپنے برانڈ نام ‘مو’ کی جگہ پورے نام ‘محمد’ کو منتخب کیا ہے۔

برطانوی اخبار دا گارڈین کے مطابق انھوں نے کہا: ‘میرا روڈ کا نام محمد ہے۔ مجھے محسوس ہو رہا ہے کہ مو کا کام پورا ہو گیا۔ میں نے کیا حاصل کیا اور کیا کارنامہ انجام دیا مجھے اب اسے بھول جانے کی ضرورت ہے۔’ مو فرح پر ان کے کوچ البرٹو سلیزر کے ساتھ ساز باز کا الزام ہے اور سلیزر کے خلاف امریکہ کی ڈوپنگ مخالف ایجنسی جانچ کر رہی ہے۔ فرح کبھی ڈوپنگ کی جانچ میں پکڑے نہیں گئے ہیں اور دونوں ڈوپنگ کے الزامات کی تردید کرتے ہیں۔ محمد فرح نے اپنے ناقدوں کو جواب دیتے ہوئے کہا: تاریخ جھوٹ نہیں بولتی۔ میں نے اپنے کریئر میں جو حاصل کیا ہے لوگوں کو اس پر فخر ہے۔ آپ جو چاہیں لکھیں۔ لیکن حقیقت یہ ہے کہ میں نے جو کچھ حاصل کیا ہے اپنی محنت اور لگن سے حاصل کیا ہے۔ میں نے اپنی جان لگا دی ہے اور سالہا سال اپنے ملک کے لیے کارنامہ انجام دیا ہے۔’

انھوں نے مزید کہا: ‘کبھی کبھی مجھے یہ عجیب لگتا ہے بعض لوگ کچھ چیزیں اپنے حساب سے لکھنا چاہتے ہیں اور اپنی طرح سے کہانی کہنا چاہتے ہیں۔
34 سال ایتھلیٹ 24 اگست کو زیورچ میں ہونے والی پانچ ہزار میٹر کی آخری دوڑ کے بعد میراتھن پر توجہ مرکوز کرنا چاہتے ہیں۔ مو فرح نے دنیا کے اہم ترین مقابلوں میں دس طلائی اور دو نقرئی تمغے کے ساتھ اپنے ٹریک کے کریئر کا خاتمہ کیا ہے۔

Sports

Meet Sir Mo Farah at London book signing

Sir Mo Farah will be meeting fans and signing copies of his latest children’s book this week. 117 more words

Books

Mohamed Farah: Dominating By Centimeters

A column by Len Johnson

A Somaliland-born British legend Mohamed Farah won the final track race of his career in the same manner as many of his famous Championships victories – looking utterly dominant while winning by centimeters. 1,087 more words

Sports