Tags » Panjab

وفاقی وزر ہاﺅسنگ اینڈ ورکس محمد اکرم خان درانی نے فیڈرل گورنمنٹ ایمپلائیز ہاﺅسنگ فاﺅنڈیشن کے تحت جاری وزیر اعظم ہاﺅسنگ منصوبے میں پلاٹس کےلئے درخواستیں جمع کرانے والے تمام صحافیوں اور میڈیا ورکرز کو بلا تخصیص پلاٹ الاٹ کرنے کا اعلان کیا ہے

اسلام آباد( توقیر خان سے  ) وفاقی وزر ہاﺅسنگ اینڈ ورکس محمد اکرم خان درانی نے فیڈرل گورنمنٹ ایمپلائیز ہاﺅسنگ فاﺅنڈیشن کے تحت جاری وزیر اعظم ہاﺅسنگ منصوبے میں پلاٹس کےلئے درخواستیں جمع کرانے والے تمام صحافیوں اور میڈیا ورکرز کو بلا تخصیص پلاٹ الاٹ کرنے کا اعلان کیا ہے اور کہا ہے کہ گلگت بلتستان سمیت چاروں صوبوں میں صحافیوں اور میڈیا ورکرز کو انتہائی سستے داموں پلاٹس فراہم کئے جائینگے۔انہوں نئے کہا کہ مملک کو سب سے زیادہ نقصان آمروں نے پہنچایا ہے۔صحافتی تنظیمیں اور جمہوری قوتیں ملکر آمریت کا راستہ مستقل بنیادوں پر روک سکتی ہیں۔ میڈیا ورکرز کی کم سے کم تنخواہ 25000 روپے مقرر کرانے کےلئے ایپنک اور پی ایف یو جے کا مطالبہ وفاقی کابینہ کے اجلاس میں وزیر اعظم کو پیش کرونگا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے آل پاکستان نیوز پیپر ایمپلائیز کنفیڈریشن (ایپنک) کے زیر اہتمام منعقدہ عظیم الشان میڈیا کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔کنونشن میں ملک بھر سے ایپنک اور پی ایف یو جے کے 100 سے زائد مندوبین نے شرکت کی۔کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر محمد اکرم خان درانی کا کہنا تھا کہ ملک کا مستقبل روشن ہے ۔ ہم سب کو ملک کی ترقی کےلئے کام کرنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کو سب سے زیادہ نقصان آمریت نے پہنچایا ہے ۔ کرپشن کا راستہ آمروں نے کھولا ہے۔ ہمیں اس راستے کو بند کرنے کےلئے سوچ بچار کرنا ہو گی۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم محمد نواز شریف نے غریبوں کےلئے کم قیمت مکانات کی تعمیر کے منصوبے پر تیز رفتار عمل کےلئے میری سربراہی میں ایک اعلیٰ اختیاراتی کمیٹی قائم کی ہے جس مین وفاقی وزیر احسن اقبال سیکرٹری خزانہ اور سپیشل سیکرٹری تو پی ایم فواد حسن فواد شامل ہیں۔ کمیٹی نے منظوری دی ہے کہ صحافیوں اور میڈیا ورکرز سمیت تمام عام شہریوں کو 20 سال کی آسان اقساط پر مکانات تعمیر کر کے دیئے جائینگے جس کی کل قیمت 15 سے 20 لکھ روپے کے درمیان ہو گی اور صرف ڈیڑھ لاکھ روپے ایڈوانس دے کر مکان کی ملکیت اور قبضہ دے دیا جائے گا۔انون نے کہ پاکستان کی سب سے پہلی میڈیا کالونی بنانے کا اعزاز مجھے حاصل ہے ۔ آنے والی حکومت نے پشاور کی میڈیا کالونی سے نام ” درانی” ختم کرنے کی کوشش کی جسے غیرت مند صحافیوں نے مسترد کر دیا۔ایپنک کے نومنتخب چیئرمین سیداکرام بخاری نے اپنے خطاب میں کہا کہ تقسیم در تقسیم نے میڈیا ورکرز کو غربت کے اندھیرے میں دھکیل دیا ہے انہوں نے مطالبہ کیا کہ کسی بھی میڈیا ورکر کی کم سے کم تنخواہ 25000 ہزار مقرر کی جائے۔ نیا ویج بورڈ بلا تاخیر قائم کیا جائے ۔ انہوں نے تمام تقسیم شدہ صحافتی تنظیموں کو دعوت دی کہ وہ اختلافات بھلا ایک جھنڈے تلے جمع ہو جائیں تاکہ ہم پوری قوت کیساتھ اپنے مطالبات تسلیم کرا سکیں۔انہوں نے کہا کہ جس دن وزیر اعظم پاکستان مولانافضل الرحٰن بنیں گے اسی دن میڈا ورکرز سمیت پورے پاکستان کے مسائل حل ہو ں گے۔وزارت داخلہ کے پارلیمانی سیکرٹری ڈاکٹر محمد افضل خان ڈھانڈلہ نے اپنے خطاب میں کہا کہ میڈیا کی اصل قوت اتحاد ہے آپ اپنی سفوں میں اتحاد برقرار رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ میں بطور مسلم لیگی ایم این اے اسمبلی اور اسمبلی سے باہر آپ کی آواز بنوں گا۔کنونشن سے سیکرٹری جنرل ایپنک شکیل یامین کانگا ، سیکرٹری جنرل پی ایف یو جے جی ایم جمالی ، چیئرمین ایپنک اسلام آباد محمد صدیق انظر ، ایم ڈبلیو او کے سدر کلیم شمیم ، وائس چیئرمین ایپنک کراچی رانا محمد یوسف،جنرل سیکرٹری کراچی ایپنک دارا ظفر، کراچی یونین آف جرنلسٹس کے صدر حسن عباس نے بھی خطاب کیا۔

امجد کاشمیری درینہ کارکن شاہد ین خان کو منانے ان گھر پہنچ گیے ۔

واہ کینٹ(توقیر خان سے) وائس چئیرمین حاجی امجد وارڈ نمبر سات منیر آباد میں سابق اُمیدوار برائے جنرل کونسلرشاہدین خان کو منانے ان کے گھر واقع منیر آباد پہنچ گئے جس پر شاہدین خان نے حاجی صاحب کو اپنے تحفظات سے آگاء کرتے ہوئے بتایا کہ منیرآباد وارڈ سات مسائل سے سرور خان صاحب اور ماسٹر نثار صاحب بخوبی آگاء ہیں آپ کا آنا سر آنکھوں پر مگر بغیر خان صاحب کے معملات حل ہونا مشکل ہیں کیوں کہ خان صاحب اور ماسٹر نثار صاحب کو متعدد بار مسائل سے آگاء کیا مگر ہمیں نظرانداز کیا گیا ان کا کہنا تھا کہ کچھ لوگ چور راستوں سے اور عہدوں کی لالچ پر پی ٹی آئی میں آنے کے لئے بھرپور کوشیش کر رہے ہیں مگر ہم جب بھی پارٹی کا حصہ بنے تو تمام تحفظات پارٹی کے ہائی کمانڈ کے سامنے رکھ کر شمولیت کرینگے اس موقع ہر سابق اُمیدوار حلقہ سات احمد شاہ بھی موجود تھے ان کا کہنا تھا کہ ہم غریب عوام کی خدمت کا جذبہ لیکر پہلے بھی میدان آئے تھے آئندہ بھی عوام کی خدمت کے لئے اپنے دن رات وقف کرینگے اس موقع پر اہل علاقہ کے ذمہ داران نے بھی شرکت کی جبکہ حاجی امجد نے کہا کہ سرور خان صاحب بہت جلد آپ کے پاس آ کر اپ کے تمام تحفظات دور کرینگے

وارڈ نمر 7 میں پاکستان تحریک انصاف کی کارنر میٹنگ ۔غلام سرور خان بذات خود کارنر میٹنگز میں شریک ۔

واہ کینٹ ( توقیر خان سے ) وارڈ نمبر 7 میں سیاسی درجہ حرارت پاکستان تحریک انصاف کے حق میں ۔ وارڈ نمبر 7 حاجی ادریس صاحب کے گھر کارنر میٹنگ میں مہمان خصوصی ممبر قومی اسمبلی غلام سرور خان تھے ممبر صوبائی اسمبلی ملک تیمور مسعود اکبر کی شرکاہ سے خطاب کیا ۔ حاجی ادریس صاحب کے گھر ہونے والی کارنر میٹنگ میں ناراض ساتھیوں سے بات کی اور پارٹی کو مضبوط کرنے اور آئندہ الیکشن 2018 کے لائے عمل پر اظہار خیال کیا گیا۔ غلام سرور خان صاحب نے واہ کینٹ میں سیاسی ملاقاتوں کا سلسلہ تیز کردیا ہے اور ناراض کارکنا ن سمیت نئے لوگوں کی شمولیت کے لیے غلام سرور خان خود متحرک ہیں اس موقع پر نوجوان رہنما پاکستان تحریک انصاف صدر یوتھ ونگ پی پی 8 عثمان گل سمیت وائس پریزیڈنٹ کینٹ بورڈ امجد محمود کشمیری صاحب ،سابقہ امیدوار برائے کونسلر لال زادہ خان صاحب نے شرکت کی اس موقع پر مقررین نے علاقہ کے مسائل پر بات اور ناراض ساتھیوں سے ملاقا تی کی اور ناراض کارکنان کے درمیان اختلاف کو دور کیا۔

Bhindrawale: an alternative view

‘The Sikhs are the only race, that I know of, who sacrificed their own nationhood in order to free the non-Sikh population of India from more than one thousand years of humiliation, subjugation and occupation at the hands of not just one but two (Semitic) Empires. 2,661 more words

Philosophy & Spirituality

مجتبی شاہ کاظمی پاکستان تحریک انصاف میں شامل ۔ براہمہ گروپ کے خلاف صف آرا ہونے کا اعلان ۔ تمام گلے شکوے دورپرانی وابستگیاں بحال۔

واہ کینٹ( توقیر خان سے )  رہنما پاکستان تحریک انصاف ممبر قومی اسمبلی خان غلام سرور خان واہ کینٹ کے ناراض رہنما سابق امیدوار وارڈ نمبر 9 واہ کینٹ مُجتبٰی شاہ کاظمی کو منانے رات گئے ان کے گاؤں بھابڑہ پہنچ گئے رہنما پاکستان تحریک انصاف ممبرقومی اسمبلی خان غلام سرور خان نے مجتبی شاہ کاظمی کو گلے لگا لیا کاظمی شاہ نے براہمہ گروپ ممبر کینٹ بورڈ ملک احتشام اقبال پر بھرپور تحفظات کا اظہار کیا۔ گلے شکوے کرنے کے بعد کاظمی شاہ نے پارٹی اور خان غلام سرور خان سے اختلافات ختم کرنے کا اعلان کر دیا مجتبی شاہ کاظمی کی شمولیت براہمہ گروپ کے لیئے خطرے کی گھنٹی ہے ۔مجتبٰی شاہ کاظمی جلد ہی ایک بڑے جلسہ عام کا انعقاد کریں گے جس سے خان غلام سرور خان خصوصی خطاب کریں گے۔مجتبی شاہ کاظمی کا نیشنل نیوز پاکستان سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ہم نےیہ فیصلہ ملکی حالات کےپیش نظر کیا اس کے ساتھ پاکستام مسلم لیگ ن کے رویے سے تنگ آ کر یہ فیصلہ کیا ہے۔ہمارا اندازِ سیاست پہلے بھی خان برادری سے ملتا جلتا اب بھی ملتاہے لیکن ہراہمہ گروپ کی وجہ سے ہم نے علحیدگی اختیار کی تھی خان صاحب نے بھرپور انداز سے یقین دہانی کروائی ہے اور مجھ سے اس بات کا اظہار کیا کہ ان کو غلط بریف کیا گیا تھا تمام معاملات کو بیٹھ کر حل کیا جائے گا۔ رابطہ کی عدم دستیابی اور غلط بریفنگ کی وجہ یہ حالات یہاں تک پہنچے ۔ مجتبی شاہ کاظمی جلد عظم الشان جلسے کا انعقاد کریں گے۔

فخر پاکستان چوہدری نثار علی خان کی سیاست قوم کی بھرپور ترجمانی کرتی ہے۔راجہ سرفراز۔

واہ کینٹ (توقیر خان سے ) وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کا انداز سیاست قوم کی بھروپر ترجمانی کررہا ہے ۔ انشا اللہ پاکستان کی تعمیر وترقی اور قیام امن کے لیے قوم چوہدری نثار علی خان کے وژن سے استفادہ کرتی رہے گی ۔ ان خیا لات کا اظہار رہنما پاکستان مسلم لیگ ن واہ کینٹ راجہ سرفراز نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ ان کا کہنا تھا کہ چوہدری نثار علی خان قومی معماملات میں مصروف ہونے کے باوجود اپنے انتخابی حلقے کے لیے وقت نکال رہے ہیں ان کے دور میں ہونے والے ترقیاتی پراجیکٹس کی مثال ملنا مشکل ہے۔ وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کی ترقیاتی کاموں فہرست طویل ہے جسے بیان کرنا مشکل ہے ہمارا فخر ہے کہ ایک انٹرنیشنل پائے کا لیڈر ہمارے حلقے سے وابستہ ہے۔اپنے دور میں انہوں نے انصاف اور حب الوطنی کی جو مثال قائم کی وہ آج تک نہیں ملتی ۔ہمیں ہر لمحہ چوہدری نثارعلی خان کی ذات پر فخر رہتاہے۔ خدمت کی جو مثال فخر پاکستان نے پیش کی اس کی مثال نہیں ملتی ۔حالانکہ سابقہ الیکشن میں ہمیں کامیابی حاصل نہیں ہوئی لیکن اس کے باوجود اقتدار میں بیٹھے نمائندگان سے زیادہ کام کرکے دکھائے اس سے ثابت ہوتا ہے کہ ہم خدمت کرنا چاہتے ہیں ۔آئندہ آنے والا الیکشن انشا اللہ وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کو تحفے کے طور پر پیش کریں گے ۔ ہم اپنی مقامی قیادت کےسنگ مل کر گلی گلی محلہ محلہ گھوم رہے ہیں اور جو خدمت کی فضا ہم نے قائم کی ہے اس کی مثال بننا ناممکن ہے۔ اس وقت کینٹ بورڈ میں اکثریت لینے کےبعد بھی پاکستان تحریک انصاف سے لسانیت کی بو آتی ہے چن چن کر وہ گلی محلے علاقے چھوڑے جا رہے جہاں سے ن لیگ کے ووٹر سپورٹر موجود ہیں ۔ کینت بورڈ میں بیٹھے نمائندگان کو نظریاتی اختلافات سے بالا تر ہوکر کام کرنا چاہیے ۔ لیکن کینٹ بورڈ میں بیٹھ کر منصوبہ بندی کی جاتی ہے اور عوام کی خدمت کے بجائے انتقام کی کڑیاں ملائی جاتی ہیں لیکن الحمدو ہمارے لیڈر نے ہارجیت سے بالاتر ہوکر سب کے لیے وہ کام کر دکھائے جو مخالفین کے سیاسی تابوت میں آخری کیل ثابت ہوگی ۔ میں قیادت کی پیروی کرتے ہوئے ہر لمحہ عوام کے لیے میسر ہوں۔ 2018 کا الیکشن ن لیگ کے ایک صبح نوید ہوگا۔ اورہم 2018 میں الزامات تراشی ، شعبدہ بازی اور دھرنوں کی سیاست کو اس ملک سے باہر نکال کر پھینکیں گے ۔انشا اللہ آنے والے دور بھی پاکستان مسلم لیگ ن کا ہے ۔

چوہدری نثار علی خان کے ترقیاتی کاموں کا جادو سرچڑ کر بول رہاہے ۔سردار سلطان بر وقت اینٹری نے سیاسی میدان میں حل چل مچا دی ہے۔

واہ کینٹ (توقیرریاض اتمانزئی)پاکستان مسلم لیگ ن وا ہ کینٹ سیکریٹریٹ کھلے کے بعد ن لیگی کارکنا کی بہاریں واپس آچکی ہیں ۔معاون خصوصی چوہدری نثارعلی خان جناب سردار سلطان کی واپسی نے واہ کینٹ میں تہلکہ مچا دیا ہے ۔ پاکستان مسلم لیگ ن کے ناراض ورکر جوق در جوق سردار سلطان سے ملنے پبلک سیکریٹریٹ واہ کینٹ میں حاضر ہور ہے ہیں ہر ملنے والے کارکن کے یہ الفاظ ہوتے ہیں کہ ہمارے لیے چار سال سے دروازے بند تھے آپ کے آنے سے کھل گئے سردار سلطا ن کی ملنسار شخصیت سے متاثر افراد کا میڈیا سے کہنا تھا کہ سردار سلطان کام بھلے نہ کرے لیکن جو عزت وہ ورکر اور عام آدمی کو دیتےہیں وہ ہی کافی ہے۔ سردار سلطان کا واہ کینٹ سیکریٹریٹ پر سیکنڑوں کی تعداد میں کارکنا ن سے ملاقاتیں۔ملاقاتوں میں تمام تر شکایات کے ازالے کی یقین دہانیاں ۔ سردار سلطان کا کہنا ہے کہ اب میں آ گیا ہوں انشا اللہ کسی کو کوئی پریشانی نہیں ہوگی ۔ چار سال سے بن دروازے کھلنے کے بعد لیگی کارکنا ن میں جذبہ دوبارہ سے بحال ہوچکا ہے ۔ ہر وارڈ محلے گلی میں ن لیگی کارکنا ن کی بیٹھکیں لگنا شروع ہوگئی ہے ۔ سردار سلطان کی اپنے ساتھیوں کےہمراہ ہر ورکر کے گھر پر ملاقاتیں ورکرز کے درمیان موجود بے اعتمادی کی فضا کو ختم کر رہی ہے۔ سردار سلطان کی رابطہ مہم نے پورے حلقے میں سیاسی سرگرمیاں تیز کر دیں ہیں۔ وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کے معاون خصوصی سردار سلطان نے واپس آکر ن لیگ کی ڈوبتی کشتی کو ڈوبنے سے پچا لیا ہے ۔ اس وقت سردار سلطان ،فیاض خان تنولی سمیت دوسرے رہنماوں نے باضابطہ طور پر بپلک سیکریٹریٹ پر اپنی موجودگی کو لازم کر دیا ہے ۔ اور اس وقت یہ فضا قائم ہوچکی ہے کہ وقت کے ساتھ ساتھ ن لیگ کے ساتھ مقابلہ ایک مشکل مرحلہ ہوگا۔ این اے 53 اور پی پی 8 کی فضا ن لیگ کی جیت کے آثار سے نظر آتی ہے ۔ پی پی 8 میں اگر چوہدر ی نثار علی خود سامنے اجائیں تو یہ سیٹ ان کے نام ہوگی ورنہ کسی بھی امیدوار کےلیے ملک تیمور کا مقابلہ کرنا ناممکن ہے چوہدری نثار علی خان کے ترقیاتی کاموں کا جادو سر چڑ کر بول رہا ہے۔ اور سردار سلطان کی بروقت اینٹری نے ان کے سیاسی حریفوں کے لیے سیاسی میدان میں حل چل مچا دی ہے ۔