Tags » PTI

Jahangir Khan Tareen
Historic speech by Chairman PTI on party unity and the role of Jahangir Khan Tareen, Pervez Khattak and Aleem Khan in PTI. Must watch! 16 more words

Urdu Blog- American Senator's Lie and Imran khan's Lies

امریکی سینیٹر کا جھوٹ.. اور خان صاحب کے جھوٹ                                                 

پاکستان میں گزشتہ سال نئے پاکستان اور تبدیلی کے نعرے لگاے گئے مگر کسی نے یہ نہیں بتایا کہ نیا پاکستان کیسے بنے گا ،موجودہ پاکستان جو ہماری شناخت ہے اس میں تو ہزاروں نوجوانوں،بزرگ،مرد ،خواتین،اور بچوں کا لہو شامل ہے اور آج انکی اولادیں بھی اس سرزمین کی حفاظت میں جان کے نذرانے پیش کررہی ہیں.
گزشتہ سال عمران خان اور انکی جماعت تحریک انصاف نے دھرنے کے دوران اس عزم کا اظہار کیا تھا کہ انکے دھرنے سے نیا پاکستان تشکیل پاے گا .. مگر انکے دھرنے سے نیا پاکستان نہیں بلکہ انکا نیا خاندان ضرور بن گیا .. خیر جانے دیجیے یہ میرا موضوع نہیں
تحریک انصاف کے چیر مین عمران خان صاحب نے دھرنے کے دوران قوم سے بہت سے وعدے کیے جو آج تک وفائ نہ ہوے .. شائد اسلیے کہ وہ وعدہ ہی کیا جو وفا ہوجاے.
دھرنے کے دوران خان صاحب نے کہا تبدیلی آ.. نہیں رہی .. تبدیلی آگئی ہے… جی یہ بات تو سچ تھی مگر صرف خان صاحب کے گھر کی حد تک جس کے لیے دھرنے کی ضرورت نہیں تھی .. انکی زندگی تو تبدیل ہوگئی مگر جہاں انکی حکومت ہے خیبرپختونخواہ میں وہاں عوام آج بھی پریشان ہے …
اسمبلیوں کی توہین کی گئی اور اسمبلی میں بیٹھنے والوں کو چور ڈاکو جیسے الفاظوں سے پکارا گیا،تمام اسمبلیوں سے استعفے بھی دیے مگرنواز حکومت کی جانب سے انکے استعفے منظور نہیں ہوے کیونکہ انھیں تحریک انصاف کے اراکین اسمبلیز کی نیتوں کا پتا تھا اور آخر میں ہوا بھی یہ ہی تحریک انصاف اسمبلیوں واپس بھی آگئی اور کئی ماہ تک غیرحاضر رہنے کے باوجود تنخواہیں بھی وصول کرلیں .. حکومت نے تو تحریک انصاف کو زلیل کرکے اسمبلی کا ممبر تسلیم کرلیا مگر اپوزیشن کی چند جماعتیں تحریک انصاف کے ارکان اسمبلی کو ڈی سیٹ کرنے کے لیے غوروخوض کررہی ہیں..
عمران خان صاحب نے دھرنے کے شرکائ سے خطاب کے دوران حکمرانوں کے لیے غیرمہزب الفاظ کی روایت کو فروغ دیا ، ایک سرکاری چینل کی عمارت پر کارکنان سے حملہ کروایا گیا ..
خان صاحب نے دھرنے کے دوران 2013 کے عام انتیخابات میں منظم دھاندلی اور 35 پنکچر کا الزام لگایا
تحریک انصاف کے الزامات کے پیش نظر جوڈیشل کمیشن کا قیام بھی عمل میں آیا مگر جب ثبوتوں اور دلیلوں کی بات آی تو خان صاحب اور انکی جماعت جوڈیشل کمیشن کے سامنے ٹھوس ثبوت پیش کرنے میں ناکام ہوگئی جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان نے دھرنے کے کنٹینر پر سے جو بھی الزامات لگاے وہ جھوٹ پر مبنی تھے جس سے ہزاروں نوجوانوں کو گمراہ کیا گیا مگر افسوس جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ کو کھلے دل سے تسلیم کرنے کے بجاے عمران خان صاحب نے اگر مگر کے ساتھ رپورٹ تسلیم کی بھی اور نہیں بھی کی

پاکستان تحریک انصاف دھرنے کے اختتام کے بعد سے جس طرح قوم کے سامنے بے عزت ہورہی ہے اس سے انھیں سبق سیکھنا چاہیے تحریک انصاف ہی نہیں سب کو اپنے ماضی سے سبق سیکھنا چاہیے ..
تحریک انصاف کے چیرمین نے دھرنے کے دوران قوم کا وقت ضایع کرنے کے ساتھ ساتھ بہت سے جھوٹ بولے جس پر انھیں قوم سے معافی مانگنی چاہیے خاص طور سے نوجوانوں سے ..
دھرنے کے دوران برطانیہ امریکہ یورپ کے طرز حکمرانی اور قوانین کے راگ الاپے گئے.امریکہ یورپ و دیگر ممالک کے گن گانے والے عمران خان صاحب امریکہ برطانیہ کے قوانین سے اتنے ہی متاثر ہیں تو انکے قوانین کا اطلاق سب سے پہلے خود سے یا خیبرپختونخواہ سے کیوں نہیں کرتے؟

رواں سال ماہ جولای میں امریکی ریاست نیویارک میں ایسا فیصلہ سامنے آیا جو وہاں کے لیے نئی بات نہیں مگر پاکستانیوں کے لیے ایک بہترین سبق ہے . امریکی ریاست کے معروف اور طاقتور سینیٹر تھامس لیبس پر اپنے بیٹے میتھیو لیبس کو زاتی اثر رسوخ کی بنیاد پر جاب یا ملازمت دینے کا الزام تھا اور مسٹر لیبس کے بیٹے میتھیو لیبس پر الزام تھا کہ انھوں نے ٹیکس میں فراڈ کیا ہے . ٹیکس فراڈ کی حوالے سے اور مسٹر میتھیو لیبس کی جاب کے حوالے سے جب ایف بی آی کے ایجینٹس نے امریکی سینیٹر سے تحقیقات کی اور جب ایف بی آی نے اپنی تحقیقات مکمل کی اس میں انکشاف ہوا کہ تفتیش کے دوران امریکی سینیٹر نے ایف بی آی سے جھوٹ بولا اور گمر اہ کیا اس بنیاد پر امریکی سینیٹر کے خلاف چارج شیٹ تیار کی گئی اور ٹرائل شروع کردیا گیا امریکی سینیٹر کے خلاف ٹرائل کے دوران انکے اس جھوٹ پر خاص زور دیا گیاجس کا فیصلہ 22 جولای 2015 کو آیا جس میں امریکی سینیٹر کو ایف بی آی سے جھوٹ بولنے پر 5 سال کی سزا سنادی گئی

  
صرف جھوٹ بولنے پر امریکی عدالت نے ایک سینیٹر کو 5 سال کی سزا سنادی یہ امریکی عوام کے لیے کوی خاص بات نہیں مگر پاکستان کی عوام کے لیے ضرور سوچنے کا مقام ہے کہ ایسے فیصلے ہمیں پاکستان میں کیوں دیکھنے کو نہیں ملتے ؟ جناب مسٹر لیبس نے تو بس جھوٹ ہی بولا تھا اور پاکستان کے سیاستدان عوام سے نہ صرف جھوٹ بول رہے ہیں بلکہ ملکی دولت لوٹ رہے ہیں , عام عوام کو تو خان صاحب کے تمام جھوٹ حرف بہ حرف یاد ہیں کیا آپکو یاد ہیں
تحریک انصاف جو نئے پاکستان کا نعرہ بلند کررہی تھی کیا وہ اپنے لیے بھی ایسا انصاف پسند کرینگے ؟ عمران خان صاحب نے مسلسل جھوٹ بولا کیا تحریک انصاف کے کارکنان تبدیلی تحریک انصاف سے لانا شروع کرینگے؟

Media