Tags » Urdu

लापता....

न फ़िज़ाओं में न तरानों में,
न महफ़िलों में न वीरानों में,
न हकीकत में न ख्यालों में,
न जानो में न अंजानों में,
न वफाओं में न जफ़ाओं में |

और तो और,
न सजदों में न बद्दुआओं  में,

है लापता मेरा सुकून,
अब मिलने की गुँजाइश कहाँ………||

Gulposh

Wo jo Qarz rakhtay thay- وہ جو قرز رکھتے تھے

Wo jo Qarz rakhtay thay- وہ جو قرز رکھتے تھے is a very interesting story of love by Farhat Ishtyaq about a girl who chooses the love of her mother over her childhood fascination. 6 more words

Novel

افضل کون، مٹی کا پتلا یا آگ کا بت؟؟..

*First posted on Express Urdu.

 میں اس سے افضل ہوں۔ مجھے تو نے آگ سے پیدا کیا ہے اور اسے مٹی سے ۔۔۔

آگ کی چنگاڑ میں رعونت ہے ۔۔ اسکی بھڑکتی  لہلہاہٹ  سے انسان تو انسان  جانور پر بھی خوف و ہراس طاری ہو جاتا ہے۔ ۔اور اسکا  جذبہ ہیبت ہی اسکا غرور ہے۔۔ کہاں بیچاری حقیر سی لیپ  دار ،گارے والی مٹی۔۔ جس میں نہ تو بھڑک ہے اور نہ ہی رعب۔۔

ابلیس کی بات میں دم تو تھا کہ اسکی تخلیق جس آگ سے ہوئی ہے وہ افضل تو تھی ہی ۔۔پھر غرور کا سریا کیونکر نہ اسکی گردن میں آتا۔۔۔

اس نے ایک منطقی دلیل دے کے اپنی صفائی پیش کی۔۔ صفائی اس ذات کے سامنے  پیش کی، جس کے رب ، مالک، خالق ہونے میں اسے ذرا برابر بھی  شک   و شہبہ نہ تھا۔۔  منطقی اس ذات کے سامنے ہو رہا تھا، جس نے اسکو  آگ سے پیدا کیا، جس طرح  آج اس کے سامنے رکھے انسان کو مٹی سے۔۔لیکن وہ اپنے آگ کے غرور میں آکے یہ سوچنے سے قاصر ہو گیا  کہ آگ  ہو یا مٹی  تخلیق میں اسکی مرضی کس نے پوچھی۔۔ اور بالفرض آگ سے افضل و اعلی کوئی مخلوق بن جاتی تب اسکی دلیل خود پہ ترس کھلوانے والی ہوتی۔۔

لیکن دل میں کونپل کسی اور  چیز کے  پھوٹنی تھی، اور وہ تھی حسد کی۔۔

ایک عام رویہ ہے کے جب کوئی  کسی سے حسد محسوس کرتا  ہے  تو  وہ کبھی بھی حسد کو براہ راست  بنیاد  نہیں بنائے گا اس سے نفرت کرنے کی بلکہ کئی وجوہات  دلیل بنائے گا نفرت کو  ثابت کرنے کی ۔۔۔  اس کو بھی حسد کی آگ بے چین کیے ہوئے تھی، جس نے اسکو دلیلیں دینےپہ اکسایا۔۔   حسد اسکی بنیاد تھی اور غرور کی چادر اسکی دلیل۔۔

   کرنا اس نے انکار ہی تھا دونوں صورتوں میں۔  ۔لیکن اپنے انکار میں ٹھوس وزن ڈالنے کے لیے دلیل  پیش کی۔۔  اور اس دلیل کو وجہ بنا کے انکار کر دیا۔۔ایک سجدے سے۔

یہی خصلت انسانوں نے بھی پکڑ لی۔۔ کرنا  انھوں نے بھی ہر صورت  انکار ہی ہوتا ہے،چاہے ایک  سجدے کا ہو یا کوئی چھوٹے بڑے حکم کا۔۔

 لیکن اپنے انکار کو وہ ہمیشہ کئی دلیلوں  میں ڈھا  کے  ایک عمارت اپنی سوچوں  کی قائم کر لیتا ہے۔   اور اپنے غلطیوں اور برائیوں پہ دلیلیوں کو جواز بنا کے وہ اس کے نقش قدموں کی پیروی کرتا ہے جس نے کئی صدیوں  پہلے اپنے افضل ہونے کا  اقرار کیا۔۔ پھر ا س کی اس سے بھی بڑی خصلت یہ تھی کے اس نے رب کو الزام دیا کہ توں نے  مجھے سیدھے راستے سے بھڑکیا، میرے انکار گناہ کا زمہ دار  رب ہے۔۔انسانوں میں بھی ایسے بڑے پیدا ہوئے ہیں جو اپنے گناہوں کا زمہ دار اللہ کو ٹھہرا دیتے ہیں۔۔

ہم فرشتے نہیں جو ہر کام صحیح کریں۔اللہ نہ چاہتا تو زمین پہ اتنے گناہ نہ ہوتے۔۔اگر اللہ چاہتا تو مجھے گناہ کرنے سے روک لیتا، لیکن اس نے نہیں کیا ایسے۔۔اگر اللہ نے ہر چیز پہلے سے طے کر کے رکھی ہے تو پھر ہمیں کیوں ذمہ دار ٹھرایا جاتا  گناہوں کا ۔۔اور ایسی بہت سی عقلی دلیلیں ہم جواز کے طور پہ پیش کرتے ہیں۔۔

ایک فرق جو آدم اور ابلیس کے رویے میں  مختلف تھا وہ یہ کے گناہ تو دونوں سے سر زرد ہو گیا، لیکن ایک نے اسکاذمہ دار اللہ کو ٹھرایا اور عقلی دلیلیں دیں۔۔ اور  ایک نے اپنی ذات کو سارا قصور وار  ٹھرا کے پستی اختیار کی اور  معافی مانگ لی۔۔۔ اس نے مان لیا تھا کے کچھ ہو جائے رب کی ذات  نا انصاف نہیں ہو سکتی۔۔۔

تو پھر  افضل کون ہوا؟۔۔حقیر مٹی کا وہ پتلا جو گیلے گارے سے بنا تھا یا آگ کا وہ جلتا بت؟۔۔

– – – – – – – – – – – – –

مدیحی عدن

What I Think

Du’aa’ -- which language ?

If the worshiper is unable to make du’aa’ in Arabic, there is no reason why he should not make du’aa’ in his own language, so long as he starts learning Arabic in the meantime. 91 more words

Allah

Qaid e Tanhae- قیدِتنہایؑ

Qaid e Tanhae- قیدِتنہایؑ is another master piece by Umaira Ahmed about a loving married couple who had to seperate due to financial reasons.

Download Qaid e Tanhae- قیدِتنہایؑ

Novel

Koi baat hai teri baat mai- کویؑ بات ہےتیری بات میں

Koi baat hai teri baat mai- کویؑ بات ہےتیری بات میں is another simple but very inspiring novel by Umera Ahmed.

Download Koi baat hai teri baat mai- کویؑ بات ہےتیری بات میں

Novel