Tags » Use Of Social Media

Use of Social Media: Defines my Generation

Social networking is the defining characteristic of my generation. Previous age groups were defined by factors such as their parents’ post-war procreation rates or their own collective inclinations for tie-dye and peace signs, but ours is definitely latched with social media. 358 more words

Social Media

Today's News as a Source for Wild Writer Prompts?

A nice thing for writers of the arcane about today’s internet is that there are so many of these gems available at the click of a mouse! 25 more words

Alton Chapter

Ever Wondered Why Writers Blog?

For those authors who don’t yet see any point in blogs or worry that posting online will portray them to others as self-absorbed, even narcissistic, this reasoned confession of her logic for blogging by a New York University professor may help explain some of the motivation that propels we committed bloggers who are also writers to continue to post: 279 more words

Writing Advice

Does a Writer Need a Social Media Platform?

As a recent MFA graduate who’s wading into the world of publishing, I’ve been counselled to start a blog, scare up a couple thousand Facebook friends, consider Twitter. 

68 more words
Writing Advice

A Tip for Self-publishers

Book trailers can be a productive part of today’s promotional tools for our new books. Many look amateurish, but here’s a nicely done one put up on… 76 more words

Writing Advice

Socially disconnected?

The Patchwork Quill wouldn’t exist without social media. Not in its current form, anyway. From the content of the What’s On Calendar, to the people, places and projects I write about in the posts – most of what you see here has come to my attention, directly or indirectly, through Facebook, Twitter, Instagram, Pinterest or Vine. 446 more words

CREATIVITY

حافط سعید کا پیغام- سوشل میڈیا کا استعمال

میرے محترم بھائیو! میں یہ چاہتا ہوں کہ اس موقع پر یہ گزارش کروں کہ میڈیا پر کام کرتے ہوئے ہمیں اپنے جماعتی مزاج کو سب سے پہلے ذہن میں رکھنا چاہیے ، اپنے اخلاقی معاملات کو بہت ہی بہتر کرنا چاہیے۔ اور اگر ہم یہ چاہتے ہیں کہ اپنے جماعتی مزاج کو بھی سمجھیں اور اخلاقی معیار کوبہت بلند رکھیں تو اس کی پہلی بات یہ ہے کہ ہمیں اپنی نمازوں کی بہت زیادہ پابندی کرنی چاہیے۔، اذکارکا مسلسل اہتمام کرتے رہنا چاہیے۔قرآن مجید کی تلاوت کے ساتھ دل لگانا چاہیے ،خاص طور پر تہجد اور اشراق کی طرف متوجہ رہنا چاہیے۔تو یہ وہ چیزیں ہیں جن کے ذریعے آپ میڈیا میں اپنے مؤثر کام کو جاری رکھ سکتے ہیں۔


میڈیا ایک دو دھاری تلوار ہے۔بجائے اس کے کہ اس کا کوئی اثر ہم پر ہو ، ہم اسے مؤثر انداز میں استعمال کرنا چاہتے ہیں ۔ اوران شا ء اللہ اس کےذریعے دعوت وجہاد کا پیغام لوگوں تک پہنچانا چاہتے ہیں۔تو اس کام کے لیے جو بھائی بھی اس میں کام کر رہے ہیں۔انہیں اپنے کردار کو بہت ہی پختہ رکھنا چاہیے۔اور خاص طور پر شریعت میں جن چیزوں کو ممنوع قرار دے دیا گیا ہے،ان کی بہت سختی سی پابندی کرنی چاہیے۔اور جو ناگزیر ہیں ، صرف اتنی حد تک ہم ان چیزوں میں آگے بڑھیں ۔

تو یہ میں خصوصی طور پر یہ عرض کرنا چاہتاہوں کہ الحمداللہ ہمارا ایک منہج ہے کہ کتاب وسنت کی بنیاد پر دعوت و جہاد کے مشن کو اختیار کرنا ،اور ایک اتحاد کی فضا کو قائم کرنا۔ تو دعوت دلیل سے ہوتی ہے، اخلاق سے ہوتی ہے۔ جب خاص طور پر ہر شخص کے سامنے نصیحت کا انداز اختیا ر کریں گے، اور ہر شخص کو یہ باور کروادیں گے کہ ہم خیر خواہی رکھتے ہیں، ہم سیاسی مخالفت پر کام کرنے والے لوگ نہیں ہیں۔ ہم مذہبی گروہ بندی کو تسلیم کرنے والے لوگ نہیں ہیں۔ہم تو خالص اسلام کی دعوت پھیلاکر دنیا کو اس کے طابع کرنا چاہیے۔ توالحمداللہ اتنا بڑا مشن لے کر آپ چلیں گے تو اس کے لیے آپکو بہت بلند معیار بھی رکھناپڑے گا۔ اور اس کے ساتھ لوگوں میں اچھاتاثر بنانے کی کوشش کرنی پڑے گی۔

اس کے ساتھ میری گزارش یہ ہے کہ اپنے کام کو زیادہ سے زیادہ منظم کیا جائے اور اپنے وقت کو صحیح استعمال کیا جائے اور پھر باہمی مشاورت کا بہت زیادہ اہتمام کیا جائے۔اسلام میں مشاورت کے لیے قرآن میں واضح احکام ہیں کہ امرھم شوری بینھم مسلمانوں کے لیے جو اجتماعی امور ہیں ان میں مشاورت کا اہتمام بہت ضروری ہے۔تو اللہ کے فضل وکرم سے آپ اچھی ٹیم بن گئے ہیں الحمداللہ۔ اور مشاورت کے ساتھ اپنے امور کو طے کرتے ہوئے آگے بڑھنا چاہیے۔ تو ان شاء اللہ اس سے یہ ہو گا کہ ہم غلطیوں سے بچیں گے اور زیادہ سے زیادہ اصلاح کا عمل جاری رکھ سکیں گے۔۔

مجھے یقین ہے کیونکہ ہمارا مقصد دعوت ہے۔ ہم دنیا میں کوئی اور مقصد لے کر نہیں چل رہے۔ دعوت انبیا ء کا مشن ہے۔ اور پھر آخری نبی محمد ﷺ دعوت کے ساتھ جہاد کے عمل کے ساتھ اسلام کو غالب کیا تھا تو ہم نے اپنے نبی ﷺ کے اسوہ حسنہ اور طریقوں کو لے کر آگے بڑھنا ہے۔میں اللہ سے دعا کرتا ہوں کی اللہ تعالی آپ تمام احباب کو اس سلسلے میں زیادہ سے زیادہ محنت کی توفیق عطا فرمائے ، رہنمائی فرمائے ۔ آپکے کاموں میں بہت زیادہ برکت دے اور اس کو نتیجہ خیز بنائے تاکہ ہم اس مؤثر ترین ہتھیار کو دعوت کے لیے استعمال کر سکیں۔